உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کولگام: عام شہریوں کی ہلاکت سے ہمیں بہت تکلیف پہنچی ہے: راجناتھ سنگھ

    وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ

    وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ

    راجناتھ سنگھ نے کولگام میں7 عام شہریوں کی اموات کو بدقسمت واقعہ قرار دیتے ہوئے مہلوکین کے ورثاء کو فی کس 5 لاکھ روپے ایکس گریشیا ریلیف دینے کا اعلان کیا ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      سری نگر: مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام کے لارو نامی گاؤں میں اتوار کو مسلح تصادم کے مقام پر دھماکہ سے 7 عام شہریوں کی اموات کو بدقسمت واقعہ قرار دیتے ہوئے مہلوکین کے ورثاء کو فی کس 5 لاکھ روپے ایکس گریشیا ریلیف دینے کا اعلان کیا ہے۔
      انہوں نے کہا کہ ہمیں شہری اموات کی خبر سے بہت تکلیف پہنچی ہے۔ انہوں نے اہلیان کشمیر سے اپیل کی کہ وہ مسلح تصادم کے مقامات کا رخ کرنے سے گریز کریں۔
      راجناتھ سنگھ نے منگل کی شام یہاں ایک نیوز کانفرنس میں کہا ’کولگام میں حادثہ پیش آیا ہے۔ مجھے جانکاری ملی ہے کہ اس میں کچھ سویلین مارے گئے ہیں۔ یہ بہت ہی بدقسمت واقعہ ہے۔ مجھے بتایا کہ آپریشن ختم ہوچکا تھا، سیکورٹی فورسز نکل چکے تھے، وہاں لوگ جمع ہوئے اور اس دوران وہاں کسی وجہ سے دھماکہ ہوا جس میں کچھ شہریوں کی جانیں ضائع ہوئیں۔ 


      انہوں نے کہا کہ ہمیں اس خبر سے بے حد تکلیف پہنچی ہے۔ میں سوگوار کنبوں کے ساتھ دلی تعزیت کا اظہار کرتا ہوں۔ پیسوں سے زندگی کی قیمت نہیں لگائی جاسکتی۔ ہم مہلوکین کے ورثاء کو فی کس 5 لاکھ روپے ایکس گریشیا ریلیف دیں گے‘۔
      وزیر داخلہ نے اہلیان کشمیر سے اپیل کی کہ وہ مسلح تصادم کے مقامات کا رخ کرنے سے گریز کریں۔ ان کا کہنا تھا ’میں یہاں کے لوگوں سے اپیل کرنا چاہتا ہوں کہ جب سیکورٹی فورسز کی طرف سے کہیں آپریشن چل رہا ہو تو مہربانی کرکے وہاں جانے کی کوشش نہ کریں۔ ہم اپنے سیکورٹی فورسز سے بار بار کہتے ہیں کہ وہ آپریشنز کے دوران احتیاط برتیں‘۔
      خیال رہے کہ لارو کولگام میں اتوار کو مسلح تصادم کے مقام پر ایک پراسرار دھماکے کے نتیجے میں کم از کم 7 عام شہری ہلاک جبکہ قریب 4 درجن دیگر زخمی ہوگئے تھے۔ پراسرار دھماکے سے قبل مسلح تصادم میں سیکورٹی فورسز کی جانب سے جیش محمد سے وابستہ 3 مقامی جنگجو مارے گئے تھے۔


       
      First published: