ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

رمضان المبارک کے دوران جموں و کشمیر میں فوجی مہم روکنے کا اچھا اثر مرتب ہوا : راجناتھ سنگھ

مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ جموں و کشمیر میں رمضان المبارک کے دوران سلامتی دستے کی مہم ملتوی کرنے کا اچھا اثر ہوا ہے اور وادی میں پتھراؤ کے واقعات میں نمایاں کمی آئی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: May 28, 2018 10:06 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
رمضان المبارک کے دوران جموں و کشمیر میں فوجی مہم روکنے کا اچھا اثر مرتب ہوا : راجناتھ سنگھ
راجناتھ سنگھ ۔ فائل فوٹو

نئی دہلی : مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا ہے کہ جموں و کشمیر میں رمضان المبارک کے دوران سلامتی دستے کی مہم ملتوی کرنے کا اچھا اثر ہوا ہے اور وادی میں پتھراؤ کے واقعات میں نمایاں کمی آئی ہے۔ پاکستانی فوج کی طرف سے مسلسل جنگ بندی کی خلاف ورزی کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کنٹرول لائن اور بین الاقوامی سرحد سے متصل علاقوں میں بنکر بنانے کے کام میں تیزی لانے پر بھی زور دیا۔

وزیر داخلہ نے یہاں ایک اعلی سطح کی میٹنگ میں وزارت داخلہ کے جموں کشمیر امور کے محکمہ کے کام کاج کا جائزہ لیا۔ انہوں نے رمضان المبارک کے دوران وادی میں پتھراؤ کے واقعات میں کمی آنے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کے رمضان کی مدت میں سلامتی دستہ کی مہم روکنے کے فیصلے کا اچھا اثر ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی جانب سے اس سال اب تک 1252 بار جنگ بندی کی خلاف ورزی کی گئی ہے۔ اسے دیکھتے ہوئے کنٹرول لائن اور بین الاقوامی سرحد پر بنائے جانے والے بنکروں کی تعمیر کے کام میں تیزی لائی جانی جانا چاہئے تا کہ معصوم لوگوں کو فائرنگ کی زد میں آنے سے بچایا جا سکے۔ وزارت داخلہ نے کٹھوعہ، سانبہ ، جموں، راجوری اور پونچھ اضلاع میں 14 ہزار سے زائد بنکر بنانے کے لئے 415 کروڑ روپے کی رقم منظور کی تھی۔ ان میں سے 13 ہزار بنکر جولائی تک بن کر تیار ہو جائیں گے۔

First published: May 28, 2018 10:06 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading