உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Indian Navy: ہندوستانی بحریہ میں P-8I اینٹی سب میرین وارفیئر ایئرکرافٹ کیاہے؟ راج ناتھ نےکی سواری

    وزیر دفاع راجناتھ سنگھ

    وزیر دفاع راجناتھ سنگھ

    ۔ P-8I طیارہ اپنی اعلیٰ سمندری نگرانی اور جاسوسی کی صلاحیتوں اور آپریشنل تیاری کے ساتھ بحریہ کے لیے ایک اہم اثاثہ ثابت ہوا ہے۔ ہندوستانی بحریہ P-8 طیارے کے لیے پہلا بین الاقوامی گاہک تھا، جسے امریکی ایرو اسپیس کمپنی بوئنگ نے تیار کیا ہے۔

    • Share this:
      ہندوستانی بحریہ (Indian Navy) کے ایک ترجمان نے بدھ کو بتایا کہ وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ (Rajnath Singh) نے ممبئی کے اپنے دورے کے دوران ہندوستانی بحریہ کے طویل فاصلے تک مار کرنے والے سمندری جاسوسی اور آبدوز شکن جنگی طیارے P-8I میں سواری اڑائی۔

      وزیر دفاع نے منگل کے روز ممبئی میں مزاگون ڈاکس لمیٹڈ (MDL) میں ہندوستانی بحریہ کے دو فرنٹ لائن جنگی جہازوں کو لانچ کرنے کے چند گھنٹے بعد ہی اڑان بھری۔ بحریہ کے ترجمان کمانڈر وویک مدھوال نے بدھ کو کہا کہ وزیر دفاع سنگھ نے ممبئی کے اپنے دورے کے دوران ہندوستانی بحریہ کے P8I طویل فاصلے تک مار کرنے والے سمندری جاسوسی اور آبدوز شکن جنگی طیاروں کی تلاشی لی۔

      یہ بھی پڑھیں:
      OIC کے بیان پر ہندوستان کا شدید ردعمل،کہا-’فرقہ وارانہ ایجنڈہ‘ نہ چلائیں

      مشن کے دوران طویل فاصلے تک نگرانی، الیکٹرانک وارفیئر، امیجری انٹیلی جنس، ASW مشنز اور سرچ اینڈ ریسکیو کی صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا گیا جس میں جدید ترین مشن سویٹ اور سینسرز کا استعمال کیا گیا۔

      یہ بھی پڑھیں:

      مسلم دانشوروں کی اپیل-مسلم بھائی بڑادل کرکے ہندوبھائیوں کوسونپ دیں Gyanvapi مسجد

       

      ۔ P-8I طیارہ اپنی اعلیٰ سمندری نگرانی اور جاسوسی کی صلاحیتوں اور آپریشنل تیاری کے ساتھ بحریہ کے لیے ایک اہم اثاثہ ثابت ہوا ہے۔ ہندوستانی بحریہ P-8 طیارے کے لیے پہلا بین الاقوامی گاہک تھا، جسے امریکی ایرو اسپیس کمپنی بوئنگ نے تیار کیا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: