ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

رام گوپال یادو نے کہا 'کس کے ساتھ ہوگا اتحاد، یہ اکھلیش اورمایاوتی طےکریں گے'۔

اکھلیش یادونے بی جے پی کے خلاف یوپی میں بننے والے اتحاد کے غیرکانگریسی ہونے کی بات کہی تھی۔

  • Share this:
رام گوپال یادو نے کہا 'کس کے ساتھ ہوگا اتحاد، یہ اکھلیش اورمایاوتی طےکریں گے'۔
سماجوادی پارٹی کے جنرل سکریٹری رام گوپال یادو: فائل فوٹو

نئی دہلی: اترپردیش کی سیاست میں اتحاد کے موضوع پرسماجوادی پارٹی کے لیڈررام گوپال یادو نے بیان دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سب جانتے ہیں کہ اتحاد ہونے جارہا ہے۔ یوپی میں سماجوادی پارٹی اوربہوجن سماج پارٹی کو زیادہ اہمیت ملے گی۔ رام گوپال یادو نے کہا کہ اکھلیش یادواورمایاوتی یہ یقینی بنائیں گے کہ یہاں کس کے ساتھ اتحاد کیا جانا ہے۔


غورطلب ہے کہ 2019 لوک سبھا الیکشن کو دھیان میں رکھتے ہوئےعظیم اتحاد کی تیاریاں کی جارہی ہیں۔ حال ہی میں اکھلیش یادو نے عظیم اتحاد کے موضوع پربیان دیا تھا۔ انہوں نے بی جے پی کے خلاف اترپردیش میں بننے والے اتحاد کے غیرکانگریسی ہونے کی بات کہی تھی۔


اکھلیش یادو نے کہا تھا کہ بی جےپی کے خلاف عظیم اتحاد کھڑا کرنے میں سبھی پارٹیوں کو ساتھ لانے کی کوشش کی جارہی ہے۔ میں تلنگانہ کے وزیراعلیٰ کے سی آر کو اس سمت میں کوشش کے لئے مبارکباد دیتا ہوں، وہ اس کام میں مصروف ہیں۔ میں ان سے ملنے حیدرآباد جاوں گا۔




انہوں نے یہ بھی کہاتھا کہ ہم کانگریس کو مبارکباد دینا چاہیں گے کہ مدھیہ پردیش میں ہمارے ایم ایل اے کو وزیرنہیں بنایا۔ ہم کانگریس اوربی جے پی دونوں کا شکریہ ادا کرتے ہیں کہ انہوں نے کم ازکم سماجوادیوں کا راستہ صاف کردیا جبکہ سماجوادی پارٹی کا ممبراسمبلی مدھیہ پردیش میں کانگریس کو حمایت دے رہا تھا۔ سماجوادی پارٹی کے قومی صدرکے اس بیان کو مدھیہ پردیش میں پارٹی کے واحد ممبراسمبلی کوکمل ناتھ کابینہ میں شامل نہ کرنے سے کانگریس کے خلاف پیدا ہوئی ناراضگی کے طورپردیکھا جارہا ہے۔
First published: Dec 31, 2018 06:22 PM IST