ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کانگریس نے شنکر سنگھ واگھیلا کو نکالے جانے کے الزام کو بتایا غلط

کانگریس نے گجرات کے سینئر لیڈر شكرسنگھ واگھیلا کے پارٹی سے نکالنے کے الزام کو غلط قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ انہیں ہٹایا نہیں گیا بلکہ انہوں نے خود پارٹی چھوڑی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 21, 2017 09:48 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کانگریس نے شنکر سنگھ واگھیلا کو نکالے جانے کے الزام کو بتایا غلط
کانگریس لیڈر رنديپ سنگھ سرجےوالا: فائل فوٹو

نئی دہلی: کانگریس نے گجرات کے سینئر لیڈر شكرسنگھ واگھیلا کے پارٹی سے نکالنے کے الزام کو غلط قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ انہیں ہٹایا نہیں گیا بلکہ انہوں نے خود پارٹی چھوڑی ہے۔ کانگریس مواصلات محکمہ کے سربراہ رنديپ سنگھ سرجےوالا نے کہا، ’’مسٹر واگھیلا کو پارٹی سے نکالا نہیں گیا ہے۔ ان کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی ہے۔ واگھیلا نے خود کانگریس چھوڑی ہے اور یہ ان کا اپنا فیصلہ ہے‘‘۔ مسٹر واگھیلا نے الزام لگایا تھا کہ پارٹی چھوڑنے کے ان اعلان سے 24 گھنٹے پہلے ہی انہیں کانگریس نے نکال دیا تھا۔

ترجمان نے مسٹر واگھیلا کے الزامات کو بے بنیاد قرار دیا اور کہا کہ وہ خود ہی پارٹی چھوڑنا چاہتے تھے۔ انہوں نے مسٹر واگھیلا پر الزام لگایا اور کہا کہ وہ گجرات کانگریس کے صدر کو ہٹانا چاہتے تھے۔ ان کی یہ شرط پارٹی کو منظور نہیں تھی کیونکہ پارٹی ہمیشہ شخصیت سے بڑی ہوتی ہے۔

پارٹی کی سینئر لیڈر امبیکا سونی کے استعفی سے متعلق خبروں پر انہوں نے کہا کہ وہ پارٹی کی سینئر لیڈر ہیں اور ان کے استعفی کا کوئی مطلب ہی نہیں ہوتا ہے۔ اگرچہ محترمہ سونی نے صحت کی بنیاد پر ہماچل پردیش اور اتراکھنڈ کے انچارج کے عہدہ سے استعفی دے دیا ہے۔

First published: Jul 21, 2017 09:48 PM IST