ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

قومی مجلس عاملہ میں نہیں پارلیمانی بورڈ کی میٹنگ میں طے ہوگا وزیر اعلی کے عہدہ کا امیدوار: روی شنکر

الہ آباد : اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں وزیر اعلی کے عہدے کے لیے کسی چہرے کو آگے بڑھانے کو لے کر جاری قیاس آرائی کے درمیان بی جے پی نے آج واضح کیا کہ وزیر اعلی کے عہدے کے امیدوار کے بارے میں کوئی بھی فیصلہ پارٹی کے پارلیمانی بورڈ میں ہی کیا جا سکتا ہے ۔

  • Agencies
  • Last Updated: Jun 12, 2016 11:29 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
قومی مجلس عاملہ میں نہیں پارلیمانی بورڈ کی میٹنگ میں طے ہوگا وزیر اعلی کے عہدہ کا امیدوار: روی شنکر
الہ آباد : اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں وزیر اعلی کے عہدے کے لیے کسی چہرے کو آگے بڑھانے کو لے کر جاری قیاس آرائی کے درمیان بی جے پی نے آج واضح کیا کہ وزیر اعلی کے عہدے کے امیدوار کے بارے میں کوئی بھی فیصلہ پارٹی کے پارلیمانی بورڈ میں ہی کیا جا سکتا ہے ۔

الہ آباد : اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں وزیر اعلی کے عہدے کے لیے کسی چہرے کو آگے بڑھانے کو لے کر جاری قیاس آرائی کے درمیان بی جے پی نے آج واضح کیا کہ وزیر اعلی کے عہدے کے امیدوار کے بارے میں کوئی بھی فیصلہ پارٹی کے پارلیمانی بورڈ میں ہی کیا جا سکتا ہے ۔


وزیر اعظم مودی کی موجودگی میں  پارٹی صدر امت شاہ کی طرف سے دو روزہ قومی ایگزیکٹو اجلاس کے افتتاح کے بعد ایک پریس کانفرنس میں سینئر بی جے پی لیڈر اور مرکزی وزیر روی شنکر پرساد نے کہا کہ اتر پردیش انتخابات کے لئے کسی چہرے کا اعلان کیا جائے یا نہیں، کس کو پیش کیا جائے اور ایسا کب کیا جائے، اس بارے میں فیصلہ آنے والے وقت میں کیا جائے گا ۔


انہوں نے کہا کہ ایسے فیصلے پارٹی کے پارلیمانی بورڈ میں لئے جاتے ہیں نہ کہ قومی مجلس عاملہ میں ۔ پرساد مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کو اگلے سال ہونے والے اسمبلی انتخابات میں وزیر اعلی کے عہدے کا امیدوار بنائے جانے کے امکان کے بارے میں پوچھے گئے سوالات کا جواب دے رہے تھے ۔ سنگھ مشرقی اتر پردیش کے چندولی کے ہیں اور لوک سبھا میں لکھنؤ کی نمائندگی کرتے ہیں ۔


ایسی قیاس آرائی زوروں پر ہیں کہ پارٹی حال ہی میں آسام میں ملی کامیابی کے بعد اتر پردیش میں بھی وزیر اعلی کے عہدے کے لئے کسی امیدوار کا اعلان کر سکتی ہے ۔ آسام میں پارٹی نے سربانند سونووال کو سامنے کیا تھا ۔ سنگھ کے علاوہ انسانی وسائل کی ترقی کی مرکزی وزیر اسمرتی ایرانی اور نوجوان ممبر پارلیمنٹ ورون گاندھی کے ناموں پر بھی قیاس آرائی کی جارہی ہے ۔

پرساد نے راج ناتھ سنگھ کو پارٹی کی طرف سے بلی کا بکرا  بنائے جانے سے متعلق باتوں پر ناراضگی ظاہر کی ۔ پرساد نے کہا کہ یہ کہنا مناسب نہیں ہوگا کہ کسی کو بلی کا بکرا بنایا جا رہا ہے، ہمارا مقصد اتر پردیش میں حکومت بنانا ہے ۔  انہوں نے کہا کہ کون چہرہ ہوگا اور کب اس کا نام ظاہر کیا جائے گا ، یہ سب فیصلے پارلیمانی بورڈ کی طرف سے لئے جائیں گے ۔
First published: Jun 12, 2016 11:29 PM IST