உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    روی شنکر پرساد اور جاوڑیکر کو بی جے پی میں ملے گی اہم ذمہ داری ، جلد ہوسکتا ہے اعلان

    روی شنکر پرساد اور جاوڑیکر کو بی جے پی میں ملے گی اہم ذمہ داری ، جلد ہوسکتا ہے اعلان

    روی شنکر پرساد اور جاوڑیکر کو بی جے پی میں ملے گی اہم ذمہ داری ، جلد ہوسکتا ہے اعلان

    اگلے سال کی شروعات میں اترپردیش ، اتراکھنڈ، پنجاب ، گوا اور منی پور میں اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں اور امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ اس کے پیش نظر روی شنکر پرساد ، پرکاش جاوڑیکر ، نشنک اور ہرش وردھن سمیت کچھ لیڈروں کو تنظیم میں شامل کرکے الیکشن ہونے والی ریاستوں کی ذمہ داری دی جاسکتی ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : مودی کابینہ میں توسیع سے پہلے روی شنکر پرساد ، ہرش وردھن اور پرکاش جاوڑیکر سمیت 12 وزرا نے اپنے عہدہ سے استعفی دیدیا تھا ۔ کابینہ سے باہر ہونے کے بعد روی شنکر پرساد اور پرکاش جاوڑیکر کو جلد ہی بی جے پی میں اہم ذمہ داری دی جاسکتی ہے ۔ دونوں لیڈروں کو پارٹی میں قومی جنرل سکریٹری یا یا نائب قومی صدر بنایا جاسکتا ہے ۔ ساتھ ہی مستقبل قریب میں الیکشن ہونے والی ریاستوں کے انچاج کی اہم ذمہ داری بھی سونپی جاسکتی ہے ۔

      اگلے سال کی شروعات میں اترپردیش ، اتراکھنڈ، پنجاب ، گوا اور منی پور میں اسمبلی انتخابات ہونے والے ہیں اور امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ اس کے پیش نظر روی شنکر پرساد ، پرکاش جاوڑیکر ، نشنک اور ہرش وردھن سمیت کچھ لیڈروں کو تنظیم میں شامل کرکے الیکشن ہونے والی ریاستوں کی ذمہ داری دی جاسکتی ہے ۔ پرساد اور جاوڑیکر پہلے بھی بی جے پی تنظیم میں اہم کردار ادا کرچکے ہیں ۔ نشنک اتراکھنڈ کے وزیر اعلی بھی رہے ہیں جبکہ ہرش وردھن دہلی بی جے پی کے صدر کے طور پر کام کرچکے ہیں ۔

      سات جولائی کو مرکزی کابینہ میں ہوئے پھیر بدل اور توسیع میں بی جے پی جنرل سکریٹری بھوپیندر یادو اور قومی نائب صدر ان پورنا دیوی سمیت پارٹی تنظیم میں مختلف ذمہ داریاں سنبھال رہے پانچ لیڈروں کو وزیر بنایا گیا ہے ۔ بی جے پی میں ایک شخص ایک عہدہ کا اصول لاگو ہے ، اس لئے مانا جارہا ہے کہ سرکار میں شامل کئے گئے لیڈروں کی جگہ تنظیم میں نئے لوگوں کو ذمہ داری دی جاسکتی ہے ۔

      ساتھ ہی ساتھ اس بات کا بھی امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ روی شنکر پرساد ، ہرش وردھن اور پرکاش جاوڑیکر سمیت مرکزی کابینہ سے باہر کئے گئے لیڈروں کو تنظیم میں ذمہ داری دی سکتی ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: