உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ممبران اسمبلی کو منانے میں ہریش راوت کامیاب ، بحران کے بادل چھٹ گئے

    دہرادون: اروناچل پردیش کے بعد اتراکھنڈ کی کانگریس حکومت پر بھی خطرات کے بادل منڈلانے لگے ہیں۔ جمعہ کی صبح کچھ ایسی خبریں آئی ہیں، جس میں بتایا گیا ہے کہ کانگریس کے 12 ممبران اسمبلی بشمول ایک کابینی وزیر بی جے پی میں شامل ہوسکتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق کابینی وزیر ہرک سنگھ راوت، امرتا راوت، پردیپ بترا اور وجے بہوگنا پارٹی تبدیل کرنے کی تیاری میں ہیں اور یہ تمام بی جے پی میں شامل ہو سکتے ہیں۔

    دہرادون: اروناچل پردیش کے بعد اتراکھنڈ کی کانگریس حکومت پر بھی خطرات کے بادل منڈلانے لگے ہیں۔ جمعہ کی صبح کچھ ایسی خبریں آئی ہیں، جس میں بتایا گیا ہے کہ کانگریس کے 12 ممبران اسمبلی بشمول ایک کابینی وزیر بی جے پی میں شامل ہوسکتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق کابینی وزیر ہرک سنگھ راوت، امرتا راوت، پردیپ بترا اور وجے بہوگنا پارٹی تبدیل کرنے کی تیاری میں ہیں اور یہ تمام بی جے پی میں شامل ہو سکتے ہیں۔

    دہرادون: اروناچل پردیش کے بعد اتراکھنڈ کی کانگریس حکومت پر بھی خطرات کے بادل منڈلانے لگے ہیں۔ جمعہ کی صبح کچھ ایسی خبریں آئی ہیں، جس میں بتایا گیا ہے کہ کانگریس کے 12 ممبران اسمبلی بشمول ایک کابینی وزیر بی جے پی میں شامل ہوسکتے ہیں۔ ذرائع کے مطابق کابینی وزیر ہرک سنگھ راوت، امرتا راوت، پردیپ بترا اور وجے بہوگنا پارٹی تبدیل کرنے کی تیاری میں ہیں اور یہ تمام بی جے پی میں شامل ہو سکتے ہیں۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:

      دہرادون: اتراکھنڈ کی کانگریس حکومت پر چھائے بحران کے بادل فی الحال چھٹ گئے ہیں۔ وزیر اعلی ہریش راوت ناراض ممبران اسمبلی کو منانے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ ہریش راوت کو کامیاب ہوتا ہوا دیکھ کر بی جے پی نے بھی حکومت کے خلاف عدم اعتماد تحریک لانے سے فی الحال انکار کر دیا ہے۔
      خیال رہے کہ آج کی صبح کچھ ایسی خبریں آئی تھیں، جس میں بتایا گیا تھا کہ کانگریس کے 12 ممبران اسمبلی بشمول ایک کابینی وزیر بی جے پی میں شامل ہوسکتے ہیں۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ کابینی وزیر ہرک سنگھ راوت، امرتا راوت، پردیپ بترا اور وجے بہوگنا پارٹی تبدیل کرنے کی تیاری میں ہیں اور یہ تمام بی جے پی میں شامل ہو سکتے ہیں۔
      بتایا جارہا تھاکہ سیاسی کھیل کا مرکز دہرادون کے دو ہوٹل بنے ہوئے ہیں، دیر رات تک ہوٹل کے الگ الگ کمروں میں سیاسی بساط بچھائی گئی تھی ۔ یہ بھی بتایا جا رہا تھا کہ یہ سارا کھیل حکومت کو گرانے کے لئے کھیلا جا رہا تھا ، جس کے لئے بی جے پی کے کئی مرکزی لیڈران بھی ہوٹل میں ہی موجود تھے۔
      بی جے پی لیڈر تیرتھ راوت نے دعوی کیا تھا کہ 'کانگریس کے ممبران اسمبلی میں کافی ناراضگی پائی جارہی ہے اور 12-13 ممبران اسمبلی ہمارے رابطے میں ہیں۔ ' جبکہ وزیر اعلی ہریش راوت نے اس اعتراف تو کیا تھا کہ بی جے پی ان کی حکومت گرانے کی کوشش کر رہی ہے ، لیکن انہوں نے اس یقین کا بھی اطہار کیا تھا کہ ان کی حکومت کو کچھ نہیں ہوگا ۔ عوام کا آشیرواد ان کے ساتھ ہے ۔ خیال رہے کہ 70 سیٹوں والی اتراکھنڈ اسمبلی میں کانگریس کے پاس 36 جبکہ بی جے پی کے 28 ممبران اسمبلی ہیں ۔ علاوہ ازیں آزاد امیدوار 3، بی ایس پی کے 2 اور يوكےڈي کے 1 رکن اسمبلی ہیں۔ 6 ممبران اسمبلی کی ہریش راوت سے ناراضگی بتائی جا رہی ہے۔

      First published: