ہوم » نیوز » No Category

رہائی منچ نے بھوپال انکاؤنٹر کو اجتماعی قتل قرار دیا، عدالتی جانچ کا مطالبہ

لکھنئو۔ رہائی منچ نے بھوپال جیل سے بھاگنے والے زیرسماعت قیدیوں کے انکاؤنٹر کی عدالتی جانچ کی مانگ کی ہے۔

  • ETV
  • Last Updated: Nov 01, 2016 07:03 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
رہائی منچ نے بھوپال انکاؤنٹر کو اجتماعی قتل قرار دیا، عدالتی جانچ کا مطالبہ
لکھنئو۔ رہائی منچ نے بھوپال جیل سے بھاگنے والے زیرسماعت قیدیوں کے انکاؤنٹر کی عدالتی جانچ کی مانگ کی ہے۔

لکھنئو۔ رہائی منچ نے بھوپال جیل سے بھاگنے والے زیرسماعت قیدیوں کے انکاؤنٹر کی عدالتی جانچ کی مانگ کی ہے۔ رہائی منچ کے صدر محمد شعیب ایڈوو کیٹ نے انکاؤنٹر پر سوال اٹھاتے ہوئے اسے سوچ سمجھ کر کیا گیا قتل قرار دیا ہے۔ رہائی منچ کے ترجمان راجیو یادو نے بتایا کہ وہ دہشت گردی کے الزام میں پھنسے نوجوانوں کے گھر والوں کے رابطے میں ہیں اور جلد ہی مدھیہ پردیش کا دورہ کریں گے۔ انہوں نے انکاؤنٹر کے ویڈیو ز پر  بھی سوال اٹھائے ہیں۔


 انسانی حقوق کی محافظ مختلف تنظیمیں انکاؤنٹر پر لگاتار سوال اٹھا رہی ہیں کہ آخر جیل میں قید ان آٹھ لوگوں کے پاس نئے کپڑے اور طمنچے کہاں سے آئے۔ دوسرا ہوم منسٹر مدھیہ پردیش کا یہ کہنا کہ لکڑی اور چمچوں سے انہوں نے جیل کے تالوں کی چابھیاں بنا لیں تھیں ، کافی عجیب لگتا ہے۔ ایک جانب چادر سے اتنی اونچی دیوار پر چڑھنا اور دوسری طرف بنا کسی مدد کے اتنی اونچائی سے کودنا بھی عجیب اور پولیس کی بنائی کہانی لگتا ہے ۔ یہ سوال بھی پیدا ہو رہا ہے کہ  پہاڑ پر جو لوگ کھڑے دکھائے گئے ہیں، وہ مارے جانے والے قیدی تھے یا پولیس والے ہی دور سے سادہ کپڑوں میں خود کو ان کی جگہ ویڈیو میں قید کرا رہے تھے ، جس سے وہ قیدیوں کے انکاؤنٹر کو صحیح ثابت کر سکیں ۔


First published: Nov 01, 2016 07:03 PM IST