உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Republic Day: جموں و کشمیر پولیس نےجیتےبہادری کے لیے 115 پولیس تمغے، جانیے مکمل تفصیلات

    سنٹرل ریزرو پولیس فورس (CRPF) جس نے پچھلے سال یوم جمہوریہ پر 68 پی ایم جی جیتے تھے اس سال 30 پی ایم جی جیتے ہیں۔ یہ جموں و کشمیر کے ساتھ ساتھ نکسل متاثرہ علاقوں میں سی آر پی ایف تعینات ہے۔ اسی طرح بارڈر سیکورٹی فورس (BSF) کو اس سال 2 پی ایم جی ملے ہیں۔ پچھلے سال بی ایس ایف کو 20 پی ایم جیز سے نوازا گیا تھا۔

    سنٹرل ریزرو پولیس فورس (CRPF) جس نے پچھلے سال یوم جمہوریہ پر 68 پی ایم جی جیتے تھے اس سال 30 پی ایم جی جیتے ہیں۔ یہ جموں و کشمیر کے ساتھ ساتھ نکسل متاثرہ علاقوں میں سی آر پی ایف تعینات ہے۔ اسی طرح بارڈر سیکورٹی فورس (BSF) کو اس سال 2 پی ایم جی ملے ہیں۔ پچھلے سال بی ایس ایف کو 20 پی ایم جیز سے نوازا گیا تھا۔

    سنٹرل ریزرو پولیس فورس (CRPF) جس نے پچھلے سال یوم جمہوریہ پر 68 پی ایم جی جیتے تھے اس سال 30 پی ایم جی جیتے ہیں۔ یہ جموں و کشمیر کے ساتھ ساتھ نکسل متاثرہ علاقوں میں سی آر پی ایف تعینات ہے۔ اسی طرح بارڈر سیکورٹی فورس (BSF) کو اس سال 2 پی ایم جی ملے ہیں۔ پچھلے سال بی ایس ایف کو 20 پی ایم جیز سے نوازا گیا تھا۔

    • Share this:
      رواں برس سینٹرل آرمڈ پولیس فورسز (CAPF) نے گزشتہ سال کے مقابلے میں کم پولیس میڈل فار گیلنٹری (PMG) حاصل کیے ہیں۔ جملہ 189 پی ایم جیز (PMGs) میں سے جموں و کشمیر پولیس نے 115 جیتے ہیں۔ اس فہرست میں جموں و کشمیر سرفہرست ہے۔ اس سال کوئی صدر پولیس میڈل فار گیلنٹری (PPMG) نہیں دیا گیا۔

      سنٹرل ریزرو پولیس فورس (CRPF) جس نے پچھلے سال یوم جمہوریہ پر 68 پی ایم جی جیتے تھے اس سال 30 پی ایم جی جیتے ہیں۔ یہ جموں و کشمیر کے ساتھ ساتھ نکسل متاثرہ علاقوں میں سی آر پی ایف تعینات ہے۔ اسی طرح بارڈر سیکورٹی فورس (BSF) کو اس سال 2 پی ایم جی ملے ہیں۔ پچھلے سال بی ایس ایف کو 20 پی ایم جیز سے نوازا گیا تھا۔

      ساشٹر سیما بال اور آئی ٹی بی پی جیسی فورسز نے گزشتہ یوم جمہوریہ میں ہر ایک کو دو پی ایم جی حاصل کیے تھے، وہیں بالترتیب تین پی ایم جی حاصل کیے ہیں۔ اس سال آسام رائفلز کو پچھلے سال کے مقابلے میں کوئی پی ایم جی نہیں ملا ہے۔ آئی ٹی بی پی کے تین جوانوں کو 2018 میں ہونے والے نکسل مخالف آپریشن کے لیے پی ایم جی سے نوازا گیا ہے۔

      آئی ٹی بی پی کے ترجمان وویک پانڈے نے کہا کہ اشوک کمار اے سی (جی ڈی) کی قیادت میں آپریشن پارٹی نے 9 فروری 2018 کو عام علاقے کٹیما، نکتی گھاٹی، ضلع راج ناندگاؤں (چھتیس گڑھ) کے بودلا گاؤں کے علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔ سریش لال، انسپکٹر اور نیلا سنگھ جو اب انسپکٹر ہیں، وہ محاصرہ اور تلاشی پارٹی کا بھی حصہ تھے۔ اطلاع کے مطابق 20 منٹ تک فائرنگ کے بعد اس آپریشن میں 2 نکسلیوں کو مارا گیا جس کے بعد ایک 7.65 ایم ایم پستول، دو 12 بور رائفلیں اور دیگر ہتھیار اور آلات برآمد ہوئے۔ آئی ٹی بی پی کے تین اہلکاروں نے مثالی بہادری اور غیر معمولی جرات کا مظاہرہ کیا اور بہادری کے اس عمل کے لیے انہیں ’پولیس میڈل فار گیلنٹری‘ سے نوازا گیا ہے۔

      جموں و کشمیر پولیس جس کے 52 جوانوں کو پی ایم جی سے نوازا گیا تھا انہیں دوگنی سے زیادہ پی ایم جی ملی ہیں۔ بگام تحصیل چاڈورہ میں مسلح دہشت گردوں کی موجودگی کے حوالے سے معتبر ذرائع سے ملنے والی معلومات کے بعد جموں و کشمیر پولیس نے 2019-20 میں کئے گئے آپریشنز کے لیے 115 پی ایم جیز حاصل کیے ہیں، جس میں بڈگام میں 2019 میں دو کانسٹیبلوں کے ذریعے دہشت گردوں کو بے اثر کرنا شامل ہے۔ کانسٹیبل مطلوب حسین شاہ اور کانسٹیبل اسرار احمد میر کو اس سال پی ایم جی سے نوازا گیا ہے۔

      بہار، آندھرا پردیش، پنجاب، اتر پردیش کی ریاستی پولیس کو پچھلے سال کے مقابلے اس سال کم یا کوئی پی ایم جی ملے ہیں۔ پچھلے سال بہار، آندھرا پردیش اور پنجاب پولیس والوں کو بالترتیب 5، 2، 3 پی ایم جی سے نوازا گیا تھا، لیکن اس سال ریاست کے کسی پولیس اہلکار کو پی ایم جی نہیں دیا گیا ہے۔ دریں اثنا پنجاب پولیس کو اس سال پی ایم جی نہیں ملی، پچھلے سال کے برعکس جب پنجاب پولیس کے تین جوانوں کو پی ایم جی سے نوازا گیا تھا۔ اسی طرح اتر پردیش پولیس نے پچھلے سال آٹھ پی ایم جی جیتے تھے لیکن اس سال صرف ایک جوان کو پی ایم جی دیا گیا ہے۔

      پچھلے سال دہلی پولیس کے کل 17 جوانوں کو پی ایم جی سے نوازا گیا تھا، لیکن اس سال صرف تین کو دیا گیا ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: