உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Russia-Ukraine War: ایئرانڈیاپائلٹ نے ’آپریشن گنگا‘ فلائٹ کی شیئرکی ویڈیو، آخرکیاہے خاص؟

    ایئر انڈیا واحد کمپنی نہیں ہے جس نے آپریشن گنگا میں شمولیت اختیار کی۔ IndiGo اور SpiceJet نے بھی آپریشن گنگا کو کامیابی کے ساتھ انجام دینے کے لیے ہاتھ ملایا ہے۔ یوکرین کے پڑوسی ممالک کے ذریعے تمام ہندوستانی شہریوں کے انخلا میں مدد کے لیے 24*7 کنٹرول قائم کیے گئے تھے۔ انخلا کی پہلی پرواز 26 فروری کو ممبئی میں اترا۔

    ایئر انڈیا واحد کمپنی نہیں ہے جس نے آپریشن گنگا میں شمولیت اختیار کی۔ IndiGo اور SpiceJet نے بھی آپریشن گنگا کو کامیابی کے ساتھ انجام دینے کے لیے ہاتھ ملایا ہے۔ یوکرین کے پڑوسی ممالک کے ذریعے تمام ہندوستانی شہریوں کے انخلا میں مدد کے لیے 24*7 کنٹرول قائم کیے گئے تھے۔ انخلا کی پہلی پرواز 26 فروری کو ممبئی میں اترا۔

    ایئر انڈیا واحد کمپنی نہیں ہے جس نے آپریشن گنگا میں شمولیت اختیار کی۔ IndiGo اور SpiceJet نے بھی آپریشن گنگا کو کامیابی کے ساتھ انجام دینے کے لیے ہاتھ ملایا ہے۔ یوکرین کے پڑوسی ممالک کے ذریعے تمام ہندوستانی شہریوں کے انخلا میں مدد کے لیے 24*7 کنٹرول قائم کیے گئے تھے۔ انخلا کی پہلی پرواز 26 فروری کو ممبئی میں اترا۔

    • Share this:
      بدھ 9 مارچ 2022 کو روسی افواج کی جانب سے یوکرین پر حملوں کا 14 واں دن ہے۔ روس اور یوکرین کے درمیان جنگ (Russia-Ukraine War) دن بہ دن طول پکڑتی ہی جارہی ہے۔ اسی دوران ہندوستان اپنے شہریوں کے انخلا کی سب سے بڑی کارروائیوں میں سے ایک انجام دے رہا ہے۔ جسے آپریشن گنگا (Operation Ganga) کا نام دیا گیا ہے۔ آپریشن گنگا کا مقصد یوکرین میں پھنسے تمام ہندوستانیوں کو بحفاظت وطن واپس لانا ہے۔

      اب تک 18,000 سے زیادہ ہندوستانی شہریوں کو یوکرین سے کامیابی کے ساتھ نکالا جا چکا ہے۔ چونکہ یوکرین کی فضائی حدود اس وقت نو فلائی زون ہے۔ اسی لیے ہندوستان پڑوسی ممالک رومانیہ، سلوواکیہ، ہنگری، پولینڈ اور مالڈووا کے ذریعے لوگوں کو نکال رہا ہے۔ منگل 8 مارچ کو شیوانی کالرا (Shivani Kalra) نامی ایئر انڈیا کی پائلٹ نے آپریشن گنگا کی آخری پرواز کو پکڑنے والی ریل کی شکل میں ایک ویڈیو شیئر کی جس کا وہ حصہ تھیں۔ اس ویڈیو میں متعدد کلپس دکھائے گئے ہیں جن میں نکالے گئے مسافروں کو فلائٹ میں داخل ہوتے اور واپس ہندوستان آتے ہوئے دکھایا گیا تھا۔ اس کے علاوہ شیوانی کالرا کے آپریشن کے بعد میڈیا ہاؤسز کو انٹرویو دینے کے کلپس بھی ویڈیو کا حصہ تھی۔

      Madhya Pradesh Budget 2022: شیوراج حکومت کے بجٹ سے مدھیہ پردیش کا اقلیتی طبقہ ہوا مایوس



      ویڈیو میں مختصر متن ہیں، جس میں انھوں نے قوم اور اپنے ہم وطنوں کی خدمت کرنے کے قابل ہونے پر اپنے فخر اور شکرگزاری کا اظہار کیا۔ انہوں نے ایئر انڈیا اور حکومت ہند کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے انہیں آپریشن گنگا کا حصہ بننے کا موقع فراہم کیا۔ انھوں نے متن کے ذریعے مطلع کیا کہ پرواز نے بخارسٹ سے اڑان بھری اور نکالے گئے تمام طلبا کو بحفاظت لے کر دہلی پہنچی۔ کیپٹن شیوانی کے انسٹاگرام پر چار لاکھ سے زیادہ فالوورز ہیں۔ اس کے پیروکاروں نے تبصرے کے سیکشن کو محبت اور حمایت سے بھر دیا، صارفین نے اسے اچھا کام کرنے پر سراہا اور دوسرے پائلٹ پر فخر محسوس کرتے رہے۔

      یہ بھی پڑھئے :  بیگمات بھوپال کے زریں کارناموں سے روشن ہے بھوپال کے ادب کی تاریخ



      ایئر انڈیا واحد کمپنی نہیں ہے جس نے آپریشن گنگا میں شمولیت اختیار کی۔ IndiGo اور SpiceJet نے بھی آپریشن گنگا کو کامیابی کے ساتھ انجام دینے کے لیے ہاتھ ملایا ہے۔ یوکرین کے پڑوسی ممالک کے ذریعے تمام ہندوستانی شہریوں کے انخلا میں مدد کے لیے  24/7 کنٹرول قائم کیے گئے تھے۔ انخلا کی پہلی پرواز 26 فروری کو ممبئی میں اترا۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: