உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایوارڈ کی واپسی کیلئے مہاراشٹر کے متعدد مصنفین پہنچے وزارت

    نئی دہلی : ساہتیہ اکیڈمی ایوارڈ واپس کرنے کا سلسلہ دراز ہوتاجارہا ہے اور ساتھ ہی حکومت کی چوطرفہ تنقید بھی تیز ہوتی جارہی ہے۔

    نئی دہلی : ساہتیہ اکیڈمی ایوارڈ واپس کرنے کا سلسلہ دراز ہوتاجارہا ہے اور ساتھ ہی حکومت کی چوطرفہ تنقید بھی تیز ہوتی جارہی ہے۔

    نئی دہلی : ساہتیہ اکیڈمی ایوارڈ واپس کرنے کا سلسلہ دراز ہوتاجارہا ہے اور ساتھ ہی حکومت کی چوطرفہ تنقید بھی تیز ہوتی جارہی ہے۔

    • News18
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی : ساہتیہ اکیڈمی ایوارڈ واپس کرنے کا سلسلہ دراز ہوتاجارہا ہے اور ساتھ ہی حکومت کی چوطرفہ تنقید بھی تیز ہوتی جارہی ہے۔ اسی سلسلہ میں مہاراشٹر کے متعدد ادبا اور مصنفین اپنے ایوارڈ واپس کرنے کے لئے وزارت پہنچے۔


      گزشتہ دنوں پنسارے، كلبرگي، لوجہاد اور دادری جیسے معاملے سے دل برداشتہ ادبا اور مصنفین حکومت کی طرف سے دئے گئے ایوارڈ کو واپس کرنے کے لئے وزارت پہنچے۔


      مہاراشٹر کے جو مصنفین اپنے ایوارڈ واپس کرنے کے لئے وزارت گئے ، ان میں پرگیا، دیا پوار، گنیش وسپوتے سنبھاجي، بھگت ہریش چندر، تھورات ملند مالشے، ارملا پوار، یشو پاٹل مكند كلے شامل تھے۔


      قبل ازیں ساہتیہ اکیڈمی نے ہنگامی میٹنگ کی۔ اس میٹنگ میں كلبرگي کے قتل پر مذمتی قرارداد پاس کر کے ایوارڈ واپس کرنے والوں سے اپنے ایوارڈ پھر سے لینے کی اپیل کی گئی۔

      First published: