உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ملائم سنگھ نے بلائی اہم میٹنگ، اکھلیش یادو بھی پہنچیں گے، ہو سکتا ہے کوئی بڑا فیصلہ

     پارٹی میں مچے گھمسان پر آج ایس پی سپریمو ملائم سنگھ نے اپنی سیاسی زندگی کی سب سے بڑی میٹنگ بلائی ہے۔

    پارٹی میں مچے گھمسان پر آج ایس پی سپریمو ملائم سنگھ نے اپنی سیاسی زندگی کی سب سے بڑی میٹنگ بلائی ہے۔

    پارٹی میں مچے گھمسان پر آج ایس پی سپریمو ملائم سنگھ نے اپنی سیاسی زندگی کی سب سے بڑی میٹنگ بلائی ہے۔

    • IBN Khabar
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی۔ کیا سماجوادی پارٹی منقسم ہونے سے بچ پائے گی؟ یہ سوال سب کے ذہن میں ہے۔ پارٹی میں مچے گھمسان ​​پر آج ایس پی سپریمو ملائم سنگھ نے اپنی سیاسی زندگی کی سب سے بڑی میٹنگ بلائی ہے۔ آج کی میٹنگ میں ملائم سنگھ کیا فیصلہ کریں گے؟ مفاہمت کا کوئی فارمولہ نکالیں گے یا پھر کوئی سخت فیصلہ کریں گے، سب کی نظریں اسی پر ٹکی ہیں۔ پارٹی دفتر میں 11 بجے یہ میٹنگ ہونے والی ہے۔

      اکھلیش یادو نے شیو پال یادو سمیت چار وزراء کو برطرف کر اپنے سخت تیور دکھا دئے ہیں۔ اسی طرح شام ہوتے ہوتے ملائم سنگھ کے تیور بھی تلخ نظر آئے۔ آج صبح 11 بجے پارٹی دفتر پر ملائم سنگھ نے تمام ممبران پارلیمنٹ، ممبران اسمبلی، سابق ممبران پارلیمنٹ کی اہم میٹنگ بلائی ہے۔ اس میٹنگ میں امر سنگھ شامل نہیں ہوں گے۔ اکھلیش اپنے ممبران اسمبلی کی میٹنگ میں براہ راست طور پر اپنے والد کو لے کر کچھ بھی بولنے سے بچتے رہے۔ صرف اتنا کہا کہ باپ بیٹے کے رشتے میں جو آئے گا، وہ بھگتےگا۔ ان کا نشانہ براہ راست امر سنگھ کی طرف تھا، لیکن ملائم سنگھ کے نشانے پر اکھلیش ضرور رہے۔

      لکھنؤ میں آج بھی سیاسی اتھل پتھل کا دور دیکھنے کو مل سکتا ہے۔ خبر ہے کہ آج اکھلیش بھی کوئی بڑا فیصلہ لے سکتے ہیں۔ امر سنگھ پر کارروائی نہ ہونے کی صورت میں وہ کوئی بڑا قدم اٹھا سکتے ہیں۔ وہیں ایس پی لیڈر ابو عاصم اعظمی نے ملائم سنگھ سے امر سنگھ کو پارٹی سے نکالنے کی مانگ کی ہے۔

      ذرائع کے مطابق ملائم سنگھ کئی بار میٹنگ میں جذباتی ہوئے۔ ملائم نے کہا کہ کیا اکھلیش کو یہی دن دیکھنے کے لیے وزیر اعلی بنایا تھا۔ جو باپ کا نہیں ہوا، وہ بات کا کیا ہوگا یعنی اپنی زبان کا پکا کیا ہوگا؟ ملائم سنگھ یادو نے کہا کہ رام گوپال نے بہت ہی خراب کردار ادا کیا ہے اور اکھلیش کو انہوں نے ہی بھڑکایا ہے۔ کس نے کہاں گڑبڑی کی اور کیا کرپشن کیا، وہ سب مجھے پتہ ہے، میں سب کے بارے میں جانتا ہوں۔
      First published: