ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

خودکش بم کے کردار میں آ رہی ہے کانگریس: بی جے پی ترجمان سنبت پاترا

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے کانگریس صدر راہل گاندھی کی قیادت میں کانگریس ورکنگ کمیٹی (سی ڈبلیو سی) کو پارٹی کی بجائے درباریوں کی کمیٹی قرار دیتے ہوئے اتوار کو کہا کہ کانگریس وزیر اعظم نریندر مودی کی مخالفت میں منفی سیاست کی حدکو پار کر کے خودکش بم کا کردار اختیار کر رہی ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 23, 2018 09:29 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
خودکش بم کے کردار میں آ رہی ہے کانگریس: بی جے پی  ترجمان سنبت پاترا
بی جے پی ترجمان سنبت پاترا

نئی دہلی: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے کانگریس صدر راہل گاندھی کی قیادت میں کانگریس ورکنگ کمیٹی (سی ڈبلیو سی) کو پارٹی کی بجائے درباریوں کی کمیٹی قرار دیتے ہوئے اتوار کو کہا کہ کانگریس وزیر اعظم نریندر مودی کی مخالفت میں منفی سیاست کی حد کو پار کر کے خودکش بم کا کردار اختیار کر رہی ہے۔ بی جے پی کے ترجمان سنبت پاترا نے یہاں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ دو دن پہلے پارلیمنٹ میں منہ کی کھانے کے بعد کانگریس کی ' ناکارہ کمیٹی' کا اجلاس اس کے 'نکمے چیئرمین' راہل گاندھی کی صدارت میں ہوا ہے۔


انہوں نے کہا کہ بیس سال تک سونیا گاندھی نے سی ڈبلیو سی کی صدارت کی اور اب یہ ان کے بیٹے کی صدارت میں ہو رہی ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ سی ڈبلیو سی کانگریس کی درباری کمیٹی زیادہ ہے۔ ڈاکٹر سنبت پاترا نے کہا کہ کانگریس سی ڈبلیو سی نے فیصلہ کیا ہے کہ بھلے ہی کانگریس دوسرے یا تیسرے درجے کی پارٹی بن جائے لیکن  مودی کو روکنا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس طرح سے کانگریس نے مان لیا ہے کہ وہ ایک نئی علاقائی پارٹی بننے کو تیار ہے لیکن ایک خاندان کےعزائم بچے رہیں اور گاندھی کو کسی بھی طرح پروجیکٹ کیا جائے۔


انہوں نے کہا کہ سی ڈبلیو سی کے فیصلے کو دو جملوں میں ایسے کہا جا سکتا ہے کہ "ہمیں الیکشن جیتنا نہیں ہے۔ ہمیں تو صرف مودی کو روکنا ہے۔ ایک طرف وزیر اعظم مودی مثبت سیاست کو آگے بڑھا رہے ہیں، جبکہ دوسری جانب راہل گاندھی کی صدارت میں کانگریس منفی فیصلہ کررہی ہے"۔ انہوں نے کہا کہ مزاحیہ لہجے میں یہ کہا جا سکتا ہے کہ کانگریس اب ایک خود کش بم کے کردار میں آ گئی ہے۔ ہم تو پھٹیں گے ہی، لیکن سامنے والے کو ضرور اڑا دیں گے۔



انہوں نے کہا کہ سونیا گاندھی نے اپنی تقریر میں کہا کہ مودی کی الٹی گنتی شروع ہو گئی ہے لیکن سچ یہ ہے کہ محترمہ گاندھی کی قیادت میں کانگریس نے ہندوستان کی الٹی گنتی شروع کر دی تھی۔ دراصل 2014 کے انتخابات کے بعد ملک میں کنبہ پروری اور نسل پرستی کی سیاست کی الٹی گنتی شروع ہوئی تھی اور 2019 کے انتخابات میں وہ اپنےمنطقی انجام تک پہنچ جائے گی۔

 
First published: Jul 23, 2018 07:59 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading