ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سنت سمیلن میں اقلیتوں کی آبادی کا پھر اٹھا معاملہ ، متعدد متنازع اور اشتعال انگیز قراردادیں پاس

الہ آباد : وشو ہندو پریشد سے وابستہ سادھو سنتوں کی سمیلن میں اقلیتوں سے متعلق متعدد متنازع اور اشتعال انگیز قرار داد پاس کی گئی ۔الہ آباد کے ماگھ میلے میں منعقد ہونے والے ایک روزہ سنت سمیلن کی صدارت وشو ہندو پریشد کے لیڈر سوامی واسو دیوا نند نے کی ۔

  • ETV
  • Last Updated: Feb 03, 2016 07:30 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سنت سمیلن میں اقلیتوں کی آبادی کا پھر اٹھا معاملہ ، متعدد متنازع اور اشتعال انگیز قراردادیں پاس
الہ آباد : وشو ہندو پریشد سے وابستہ سادھو سنتوں کی سمیلن میں اقلیتوں سے متعلق متعدد متنازع اور اشتعال انگیز قرار داد پاس کی گئی ۔الہ آباد کے ماگھ میلے میں منعقد ہونے والے ایک روزہ سنت سمیلن کی صدارت وشو ہندو پریشد کے لیڈر سوامی واسو دیوا نند نے کی ۔

الہ آباد : وشو ہندو پریشد سے وابستہ سادھو سنتوں کی سمیلن میں اقلیتوں سے متعلق متعدد متنازع اور اشتعال انگیز قرار داد پاس کی گئی ۔الہ آباد کے ماگھ میلے میں منعقد ہونے والے ایک روزہ سنت سمیلن کی صدارت وشو ہندو پریشد کے لیڈر سوامی واسو دیوا نند نے کی ۔


سمیلن میں بڑی تعداد میں وی ایچ سے وابستہ سادھو سنتوں نے شرکت کی ۔جلسے میں 9 نکات پر مبنی ایک قرار داد بھی پاس کی گئی ۔اس قرار داد میں یکساں سول کوڈ کو نا فذ کرنے اور تبدیلی مذہب کو ملک سے بغاوت کے زمرے میں رکھنے کا مطالبہ کیا گیا ۔


قرار داد میں کہا گیا ہے کہ اقلیتوں کی بڑھتی آبادی نے ملک کی سالمیت کے لئے ایک بڑا خطرہ پیدا کر دیا ہے ۔اگر اقلیتی آبادی اسی طرح بڑھتی رہی تو ہندو جلد اکثیریت سے اقلیت میں ہوجائیں گے۔

First published: Feb 03, 2016 07:30 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading