ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کیرانہ میں ماحول بگاڑنے کی خطرناک سازش رچی گئی تھی : پرمود کرشن

لکھنؤ : اترپردیش کے کیرانہ میں ماحول بگاڑنے کی خطرناک سازش رچی گئی تھی۔ یہ دعوی سماج وادی پارٹی (ایس پی) حکومت کے اصرار پر کیرانہ گئی سنتوں کی پانچ رکنی ٹیم نے کیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 23, 2016 06:12 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کیرانہ میں ماحول بگاڑنے کی خطرناک سازش رچی گئی تھی : پرمود کرشن
لکھنؤ : اترپردیش کے کیرانہ میں ماحول بگاڑنے کی خطرناک سازش رچی گئی تھی۔ یہ دعوی سماج وادی پارٹی (ایس پی) حکومت کے اصرار پر کیرانہ گئی سنتوں کی پانچ رکنی ٹیم نے کیا۔

لکھنؤ : اترپردیش کے کیرانہ میں ماحول بگاڑنے کی خطرناک سازش رچی گئی تھی۔ یہ دعوی سماج وادی پارٹی (ایس پی) حکومت کے اصرار پر کیرانہ گئی سنتوں کی پانچ رکنی ٹیم نے کیا۔ سنتو ں کی یہ ٹیم گذشتہ 19 جون کو کیرانہ گئی تھی۔ وہاں سے واپس آ کر ٹیم نے اپنی رپورٹ آج وزیر اعلی اکھلیش یادو کو سونپ دی ۔ اس موقع پر ریاست کے آبپاشی وزیر شیو پال سنگھ یادو بھی موجود تھے۔

رپورٹ سونپے جانے کے بعد ٹیم کے رکن آچاریہ پرمود کرشن نے دعوی کیا کہ کیرانہ میں ہندو کنبوں کی نقل مکانی کی بات اٹھاکر ماحول بگاڑنے کی کوشش میں لوگ مصروف تھے، تاہم انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ کیرانہ سے نقل مکانی ہوئی ہے یا نہیں۔

ٹیم کے رکن آچاریہ پرمود کرشن نے دعوی کیا کہ چار دن میں رپورٹ تیار کر کے آج وزیر اعلی کو سونپ دی گئی ہے اب اس پر کارروائی کرنا حکومت کا کام ہے۔ ایس پی حکومت کی جانب سے بھیجی گئی سنتوں کے ٹیم میں سابق جج سوامی کلیان دیو، سابق جج سوامی چنمیانند، ہندو مہاسبھا کے سوامی چکرپانی اور دیویندرانند گری شامل تھے۔

واضح رہے کہ اس سے پہلے 15 جون کو بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے اپنی جانچ رپورٹ پارٹی کے ساتھ ہی گورنر رام نائک کو بھی سونپی تھی۔ کیرانہ جانے والوں میں جنتا دل (یو) کے ساتھ ہی بائیں بازو کی ٹیم بھی شامل تھی۔

First published: Jun 23, 2016 06:12 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading