உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سامان میں ناریل ملنے پر مسلم خاتون کو اندراگاندھی ائیرپورٹ پرہراساں کیا گیا ، فلائٹ بھی چھوٹی

     اندرا گاندھی ائیر پورٹ پر ایک مسلم خاتون کو اس کے بیگ میں دو ناریل ملنے کی وجہ سے اتنا پریشان کیا گیا کہ اس کی فلائٹ ہی چھوٹ گئی۔

    اندرا گاندھی ائیر پورٹ پر ایک مسلم خاتون کو اس کے بیگ میں دو ناریل ملنے کی وجہ سے اتنا پریشان کیا گیا کہ اس کی فلائٹ ہی چھوٹ گئی۔

    اندرا گاندھی ائیر پورٹ پر ایک مسلم خاتون کو اس کے بیگ میں دو ناریل ملنے کی وجہ سے اتنا پریشان کیا گیا کہ اس کی فلائٹ ہی چھوٹ گئی۔

    • Pradesh18
    • Last Updated :
    • Share this:
      نئی دہلی : اندرا گاندھی ائیر پورٹ پر ایک مسلم خاتون کو اس کے بیگ میں دو ناریل ملنے کی وجہ سے اتنا پریشان کیا گیا کہ اس کی فلائٹ ہی چھوٹ گئی۔ یہ واقعہ پانچ اکتوبرکو پیش آیا ۔ مسلم خاتون اپنے تین بچوں کے ساتھ اپنے شوہر سے ملنے کیلئے جیٹ ائیر ویز کی فلائٹ سے سعودی عرب جارہی تھی ۔ خاتون کا شوہر سعودی عرب میں انجینئر ہے۔
      اترپردیش میں میرٹھ کے موانہ کی رہنے والی نازش بیگم پانچ اکتوبر کو اپنےشوہر کے پاس سعودی عرب جارہی تھی ۔ نازش بیگم کے مطابق اس کی فلائٹ صبح ساڑھے دس بجے کی تھی اور وہ وقت سے پہلے ہی ائیر پورٹ پہنچ گئی تھی اور اس کو بورڈنگ پاس بھی مل گیا تھا ۔بورڈنگ پاس ملنے کے بعد جیٹ ائیر ویز کے ملازمین نے سامانوں کی چیکنگ میں اس کا کافی وقت ضائع کردیا ، جس کی وجہ سے اس کی فلائٹ چھوٹ گئی ۔
      ا س سلسلہ میں جب جیٹ ائیر ویز کے ترجمان سے رابطہ کیا گیا ، تو اس نے دعوی کیا کہ سفر میں تاخیر اس لئے ہوئی کیونکہ ائیر پورٹ اتھاریٹی کو اس کے بیگ میں کچھ ممنوعہ چیز ملی ۔ ترجمان کے مطابق مسافر کو اگلی فلائٹ کی پیش کش کی گئی، مگر اس نے اس سے انکار کردیا ۔
      ادھر نازش بیگم نے جیٹ ائیر ویز کے دعوی کو جھوٹ قرار دیتےہوئے بتایا کہ میری فلائٹ چھوٹ جانے کے بعد مجھے جیٹ حکام کی طرف سے دوسری فلائٹ کا وعدہ کیا گیا ، مگر کسی بھی افسر نے ائیرلائن کے وعدہ کو پورا نہیں کیا ، بلکہ مجھ سے کہا کہ گیا کہ آپ جائیے اور دوسری ٹکٹ بک کیجئے ۔
      نازش نے حکام پر الزام لگایا کہ اس سے ہراساں کرنے والے متعدد سوالات بھی پوچھے گئے ۔ادھر نازش کے شوہر محمد محبوب نے جیٹ ائیر ویز سے غیر مشروط معافی مانگنے اور معاوضہ کا مطالبہ کیا ہے۔
      First published: