உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    احمد پٹیل کے راجیہ سبھا انتخاب کی عرضی پرگجرات ہائی کورٹ کو ازسرنو غورکرنے کی ہدایت

    کانگریس کے سینئر لیڈراور راجیہ سبھا ممبرپارلیمنٹ احمد پٹیل : فائل فوٹو

    چیف جسٹس دیپک مشرا کی صدارت والی بینچ نے احمد پٹیل اور بی جے پی لیڈر بلونت سنگھ راجپوت کے وکیلوں کی دلیل سننے کے بعد 19 ستمبر کواپنا فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      سپریم کورٹ نے بدھ کو گجرات ہائی کورٹ سے کہا کہ وہ راجیہ سبھا میں کانگریس لیڈراحمد پٹیل کے انتخاب کو چیلنج دینے والی عرضی سے متعلق فیصلے پرازسرنوغورکریں۔ پٹیل کے انتخاب کو بی جے پی لیڈربلونت سنگھ راجپوت نے چیلنج کیا ہے۔

      چیف جسٹس دیپک مشرا، جسٹس اے ایم کھانولکراورجسٹس دھننجے وائی چندرچوڑکی بینچ نے کہا کہ بی جے پی لیڈرراجپوت کی عرضی کے خلاف احمد پٹیل کی عرضی پرازسرنو غورکرنے کی ضرورت ہے۔ گجرات ہائی کورٹ کے حکم کو احمد پٹیل نےعدالت میں چیلنج دیتے ہوئے کہا تھا کہ راجپوت کی عرضی میں کوئی دم نہیں ہے اوراس میں کوئی ٹھوس وجہ بھی نہیں ہے۔

      گجرات کے راجیہ سبھا الیکشن میں کانگریس کے سینئرلیڈراورسونیا گاندھی کے بے حد قریبی اورمشیراحمدپٹیل سے ہارنے کے بعد بی جے پی امیدواربلونت سنگھ راجپوت الیکشن کمیشن کے فیصلے کے خلاف عدالت پہنچ گئے تھے۔ انہوں نے گجرات ہائی کورٹ میں کمیشن کے فیصلے کو چیلنج کیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:    احمد پٹیل سنبھالیں گے کانگریس کا خزانہ، موتی لال ووہرا کو ملی جنرل سکریٹری کی ذمہ داری

      بلونت سنگھ مسلسل اپنے وکیلوں سے تبادلہ خیال کررہے تھے تاکہ جلدی عدالت میں اپیل دائرکی جاسکے۔ دراصل ان کی ناراضگی اس بات کو لے کر ہے کہ دونوں ممبران اسمبلی کے ووٹ منسوخ ہوگئے۔ جس سے کانگریس کے امیدواراحمد پٹیل کی راہ تھوڑی آسان ہوگئی۔

      یہ بھی پڑھیں:   ناگپور میں کانگریس لیڈروں نے پرنب مکھرجی سے بنائی دور ی ، احمد پٹیل نے کہا : ان سے ایسی امید نہیں تھی

      یہ بھی پڑھیں:   احمد پٹیل کا مختار عباس نقوی کو خط ، حج سبسڈی کا استعمال اقلیتوں کی سماجی و اقتصادی ترقی کیلئے ہو

      یہ بھی پڑھیں:    گجرات انتخابات : راہل کے ساتھ مل کر بی جے پی کا قلعہ مسمار کرنے کی کوشش میں مصروف ہوئے احمد پٹیل

       

       

       
      First published: