உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سپریم کورٹ سے   SP Veteran Azam Khan کو ملی عبوری ضمانت، آج ہو گی رہائی؟

    Youtube Video

    :SC Grants Interim Bail to SP Veteran Azam Khan: جمعرات کو سپریم کورٹ نے فیصلہ سناتے ہوئے اعظم خان کو عبوری ضمانت SC Grants Interim Bail to SP Veteran Azam Khan دے دی۔ فی الحال سپریم کورٹ سے عبوری ضمانت ملنے کے بعد اعظم خان اب کھلی فضا میں سانس لیں گے یا پھر انہیں جیل میں رہ کر ضمانت کا انتظار کرنا پڑے گا۔

    • Share this:
      دہلی/ لکھنؤ۔ سماج وادی پارٹی کے ایم ایل اے اعظم خان کی ضمانت کو لے کر ایک بڑی خبر سامنے آئی ہے۔ جمعرات کو سپریم کورٹ نے فیصلہ سناتے ہوئے اعظم خان کو عبوری ضمانت SC Grants Interim Bail to SP Veteran Azam Khan دے دی۔ اعظم خان کو 89 ویں کیس میں عبوری ضمانت مل گئی ہے۔ اس سے قبل انہیں 88 مقدمات میں ضمانت مل چکی ہے۔ سپریم کورٹ نے ہدایت دیتے ہوئے فی الحال انہیں عبوری ضمانت دی گئی ہے۔ اسے دو ہفتے میں باقاعدہ ضمانت کے لیے نچلی عدالت میں درخواست دائر کرنی ہوگی۔ ٹرائل کورٹ ضمانت پر فیصلہ آنے تک اعظم خان کو عبوری ضمانت پر رہا کیا جائے گا۔ سپریم کورٹ کے جسٹس ایل ناگیشور راؤ، جسٹس بی آر گاوائی، جسٹس ایس گوپنا کی بنچ نے اس پر ضمانت پر فیصلہ سنایا ہے۔

      قابل ذکر ہے کہ اعظم خان نے سماج وادی پارٹی لیڈر اعظم خان کے خلاف ایک کے بعد ایک درج کئی معاملوں میں سپریم کورٹ میں ضمانت کے لیے درخواست دائر کی تھی۔ جہاں یوپی حکومت انہیں عادتا مجرم بتا کر ضمانت کی مسلسل مخالفت کر رہی تھی۔ وہیں اعظم خان کے وکیل کپل سبل نے سپریم کورٹ کے سامنے کئی دلائل دیتے ہوئے ضمانت کی مانگ کی تھی۔ جس پر سپریم کورٹ نے ضمانت پر فیصلہ محفوظ کر لیا تھا۔


      اس سے قبل اعظم خان کے وکیل کپل سبل نے کہا تھا کہ اعظم خان دو سال سے جیل میں ہیں، انہیں اب ضمانت دی جانی چاہیے۔ فی الحال سپریم کورٹ سے عبوری ضمانت ملنے کے بعد اعظم خان اب کھلی فضا میں سانس لیں گے یا پھر  انہیں جیل میں رہ کر ضمانت کا انتظار کرنا پڑے گا۔

      بہ بھی پڑھئے: سی ایم یوگی کا بڑا حکم، اسکولوں میں لگائے جائیں مذہبی مقامات سے اتارے گئے لاؤڈ اسپیکر

      اس سے پہلے سپریم کورٹ Supreme Court نے سماج وادی پارٹی کے سینئر لیڈر اور رام پور سیٹ سے ایم ایل اے محمد اعظم خان کی ضمانت Azam Khan Bail Plea پر فیصلہ نہ آنے پر ناراضگی ظاہر کی تھی۔ جسٹس ایل ناگیشور راؤ اور جسٹس بی آر گاوائی کی بنچ نے الہ آباد ہائی کورٹ Allahabad High Court سے پوچھا کہ 87 میں سے 86 مقدمات میں اعظم خان کو ضمانت مل چکی ہے، صرف ایک کیس میں اتنا وقت کیوں لگ رہا ہے؟

      مزید پڑھئے:  Gyanvapi Mosque Case: سپریم کورٹ میں کل ہوگی سماعت، نچلی عدالت کوہدایت،آج نہ دیں کوئی حکم

      جموں۔کشمیر:دہشت گردی کے معاملے میں علیحدگی پسند لیڈر Yasin Malik کو آج سنائی جاسکتی ہے سزا

      واضح ہو کہ سپریم کورٹ نے کہا تھا کہ 137 دن بعد بھی فیصلہ کیوں نہیں ہو پایا ہے؟ یہ انصاف کا مذاق اڑانا ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ اگر الہ آباد ہائی کورٹ اس معاملے میں فیصلہ نہیں کرتی ہے تو ہم مداخلت کرنے پر مجبور ہوں گے۔ سپریم کورٹ اس معاملے کی دوبارہ سماعت 11 مئی کو کرے گی۔ عدالت اس معاملے کی اگلی سماعت 11 مئی کو کرے گی۔ آپ کو بتا دیں کہ محمد اعظم خان گزشتہ دو سال سے سیتا پور جیل میں بند ہیں۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: