ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سپریم کورٹ کی نرودہ پاٹیا قتل عام کی عدالتی کارروائی چھ ماہ میں مکمل کرنے کی ہدایت

نئي دہلی۔ سپریم کورٹ نے آج گجرات میں احمد آباد کی ایک زیریں عدالت کو 2002 کے نڑودہ پاٹیا قتل عام کی عدالتی کارروائی چھ ماہ میں مکمل کرنے کا حکم دیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 19, 2016 05:48 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
سپریم کورٹ کی نرودہ پاٹیا قتل عام کی عدالتی کارروائی چھ ماہ میں مکمل کرنے کی ہدایت
نئي دہلی۔ سپریم کورٹ نے آج گجرات میں احمد آباد کی ایک زیریں عدالت کو 2002 کے نڑودہ پاٹیا قتل عام کی عدالتی کارروائی چھ ماہ میں مکمل کرنے کا حکم دیا ہے۔

نئي دہلی۔  سپریم کورٹ نے آج گجرات میں احمد آباد کی ایک زیریں عدالت کو 2002 کے نڑودہ پاٹیا قتل عام کی عدالتی کارروائی چھ ماہ میں مکمل کرنے کا حکم دیا ہے۔ احمدآباد کی ایک خصوصی زیریں عدالت میں یہ معاملہ زیر غور ہے۔ واضح رہے کہ نڑودہ پاٹیا قتل عام کا واقعہ گجرات فسادا ت کے دوران 20 فروری 2002 کو پیش آیا تھا، جس میں 11 لوگوں کو بے رحمی سے قتل کردیا گیا تھا۔ اجتماعی قتل کا یہ واقعہ گودھرا سانحہ کے ایک روز بعد وشو ہندو پریشد کی اپیل پر گجرات بند کے دوران پیش آیا تھا۔


نڑودہ پاٹیا معاملے میں جج جیوتسنا یاگنک نے 29 اگست 2012 کو پہلا فیصلہ سنایا تھا۔اس معاملے میں عینی شاہدین، متاثرین، ڈاکٹروں ، پولس عملہ، سرکاری افسران اور فورنسک ماہرین سمیت 327 گواہوں کو سننے اور ان سے جرح کرنے کے بعد ٹرائل کورٹ نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی سابق لیڈر مایا کوڈنانی اور بجرنگ دل کے لیڈر بابو بجرنگی کو تعزیرات ہند کی متعدد دفعات کے تحت قصوروار قرار دیا تھا۔

First published: Sep 19, 2016 05:48 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading