ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کاویری آبی تنازع: کرناٹک روزانہ 2000 کیوسک پانی تمل ناڈو کو دے گا

سپریم کورٹ نے کاویری تنازع میں کرناٹک حکومت کو آج ہدایت دی کہ وہ سات سے 18 اکتوبر تک تمل ناڈو کے لئے روزانہ 2000 کیوسک پانی چھوڑے۔

  • UNI
  • Last Updated: Oct 04, 2016 08:18 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کاویری آبی تنازع: کرناٹک روزانہ 2000 کیوسک پانی تمل ناڈو کو دے گا
فوٹو: نیوز ۱۸

نئی دہلی۔  سپریم کورٹ نے کاویری تنازع میں کرناٹک حکومت کو آج ہدایت دی کہ وہ سات سے 18 اکتوبر تک تمل ناڈو کے لئے روزانہ 2000 کیوسک پانی چھوڑے۔ جسٹس دیپک مشرا اور جسٹس اہدے امیش للت کی بینچ نے کیس کی اگلی سماعت کے لئے 18 اکتوبر کی تاریخ مقرر کرتے ہوئے سات سے 18 اکتوبر تک تمل ناڈو کے لئے دو دو ہزار کیوسک پانی فراہم کرنے کی کرناٹک حکومت کو ہدایت دی۔


عدالت نے کہا کہ اس دوران مرکزی آبی کمیشن کے چیئرمین کی قیادت میں ایک ٹیم موقع پر جاکر حقیقت کا پتہ لگائےگي اور سماعت کی اگلی تاریخ کو اپنی رپورٹ سونپے گی۔ اس سے پہلے سماعت کے دوران عدالت نے کرناٹک حکومت کے وکیل سے کہا تھا کہ وہ ریاستی حکومت سے یہ پوچھ کر بتائیں کہ سات سے 18 اکتوبر تک وہ تمل ناڈو سے کتنا پانی اشتراک کر سکے گی۔


کورٹ نے کرناٹک حکومت کے وکیل کو کچھ وقت دینے کے لئے کیس کی سماعت سوا تین بجے تک ملتوی کر دی تھی۔


First published: Oct 04, 2016 08:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading