ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

اتراکھنڈ میں جاری رہے گا صدر راج، سپریم کورٹ نے مرکز سے پوچھے یہ سات سوال

نئی دہلی۔ اتراکھنڈ میں صدر راج جاری رہے گا۔

  • IBN Khabar
  • Last Updated: Apr 27, 2016 05:20 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
اتراکھنڈ میں جاری رہے گا صدر راج، سپریم کورٹ نے مرکز سے پوچھے یہ سات سوال
نئی دہلی۔ اتراکھنڈ میں صدر راج جاری رہے گا۔

نئی دہلی۔ اتراکھنڈ میں صدر راج جاری رہے گا۔ آج سپریم کورٹ نے اس معاملے کی سماعت کرتے ہوئے کہا کہ 29 اپریل کو فلور ٹیسٹ نہیں کیا جائے گا۔ کورٹ نے کہا کہ اب 3 مئی کو اس معاملے میں اگلی سماعت ہوگی، تب تک جمود کی صورت حال بنی رہے گی۔


کورٹ نے اس کے ساتھ ہی مرکز سے کچھ سوال پوچھے۔


کیا گورنر نے آرٹیکل نے 175 (2) کے تحت جس طریقے سے فلور ٹیسٹ کا میسج کیا، اس طریقے سے پیغام بھیج سکتا ہے؟


ممبران اسمبلی کی رکنیت منسوخ کرنے کا اسپیکر کا فیصلہ کیا صدر راج نافذ کرنے کی بنیاد بنتا ہے؟

کیا صدر اسمبلی کی کارروائی کا نوٹس آرٹیکل 356 کے تحت لے سکتا ہے؟

فلور ٹیسٹ میں تاخیر ہونا کیا صدر راج کی بنیاد بنتا ہے؟

بل پاس ہوا یا نہیں، اس قانونی جواز پر کیا کورٹ سماعت کر سکتا ہے؟

جمہوریت کچھ مستقل مفروضوں پر مبنی ہوتی ہے، اس کے غیر مستحکم ہونے کا معیار کیا ہے؟ یہ بتائے جائیں۔

اس سے پہلے گزشتہ سماعت میں سپریم کورٹ نے 26 اپریل تک نینی تال ہائی کورٹ کے فیصلے پر اسٹے لگا دیا تھا۔ کورٹ نے مرکزی حکومت کو بھی ہدایت دی تھی کہ وہ صدر راج ہٹا کر نئی حکومت کی تشکیل کی کوشش نہ کرے۔

اس سے پہلے نینی تال ہائی کورٹ نے ریاست میں صدر راج کو ہٹا دیا تھا۔ لیکن اس فیصلے کے خلاف مرکزی حکومت نے سپریم کورٹ میں عرضی داخل کی تھی جس پر گزشتہ جمعہ کو سپریم کورٹ نے سماعت میں نینی تال ہائی کورٹ کے فیصلے پر اسٹے لگا دیا۔
First published: Apr 27, 2016 05:20 PM IST