ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پلوامہ حملے کا ماسٹرمائنڈ مدثرہلاک، فوج نے کردی تصدیق، جیش کے خاتمے تک جاری رہےگا آپریشن: فوج

مڈبھیڑمیں سیکورٹی اہلکاروں نے جیش محمد کے تین دہشت گردوں کومارگرایا ہے۔

  • Share this:
پلوامہ حملے کا ماسٹرمائنڈ مدثرہلاک، فوج نے کردی تصدیق، جیش کے خاتمے تک جاری رہےگا آپریشن: فوج
پلوامہ حملے کا ماسٹر مائنڈ مارا گیا، فوج نے تصدیق کردی ہے۔

فوج نے 14 فروری کوسی آرپی ایف کے قافلے پرہوئے حملے کے ماسٹرمائنڈ کومارگرانے کی تصدیق کردی ہے۔ پلوامہ کے ترال میں فوج نے تین دہشت گردوں کومارگرایا، جس میں ایک دہشت گرد مدثراحمد بھی ہے، جوپلوامہ حملے کے ماسٹرمائنڈ میں سے ایک تھا۔ مدثرکے ساتھ خالد نام کا دہشت گرد بھی مارا گیا ہے، جو پاکستان کا رہنے والا ہے۔


فوج نےاطلاع دی کہ پلوامہ حملے کے بعد کل 18 دہشت گرد مارے گئے ہیں، جس میں سے 8 پاکستان کے رہنے والے ہیں۔ گزشتہ 70 دنوں میں کل 44 دہشت گرد مارے جاچکے ہیں۔ فوج نے واضح طورپرکہہ دیا ہے کہ وہ یہیں نہیں رکنے والی ہے، جیش محمد کو ختم کرنے تک ہندوستانی فوج آپریشن جاری رکھے گی۔


حملے میں مدثرکا کیا رول تھا؟


خفیہ ذرائع کے مطابق پلوامہ میں سی آرپی ایف کے قافلے پرہوئے دہشت گردانہ حملے کے لئے مدثرنے آئی ڈی پلانٹ کیا تھا۔ اس حملے میں 40 جوان شہید ہوئے تھے، جس کے بعد ہندوستانی فضائیہ نے پاکستان کے بالا کوٹ میں جیش محمد کی ٹریننگ کیمپ پرحملہ کرکے کئی دہشت گرد مارگرائے تھے۔



چوبیس سال کا مدثرایک سال پہلے ہی جیش میں شامل ہوا تھا۔ اس سے قبل وہ جیش محمد کا اوورگراونڈ ورکرتھا۔ جانچ ایجنسیوں کی مانیں تومدثرنے دہشت گرد کامران کے ساتھ مل کرپلوامہ حملے کے لئےایک آئی ڈی کٹ بنائی تھی۔ یہ کٹ خاص طرح سے گاڑی کے ذریعہ خود کش حملہ کرنے کے لئے بنائی گئی تھی۔ سیکورٹی اہلکاروں نے کامران کو پلوامہ حملے کے فوراً بعد ہی مارگرایا تھا۔
First published: Mar 11, 2019 05:37 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading