உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سپا سینٹر میں چل رہے بڑے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، 14 لڑکیاں گرفتار ، قابل اعتراض اشیا برآمد

    سپا سینٹر میں چل رہے بڑے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، 14 لڑکیاں گرفتار ، قابل اعتراض اشیا برآمد

    سپا سینٹر میں چل رہے بڑے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ، 14 لڑکیاں گرفتار ، قابل اعتراض اشیا برآمد

    پولیس نے اس دوران 14 لڑکیوں اور پانچ لڑکوں کو گرفتار کیا ہے ۔ چھاپہ ماری کے دوران لڑکے اور لڑکیاں قابل اعتراض حالت میں پائے گئے ۔ جائے واقعہ سے قابل اعتراض اشیا بھی برآمد کی گئی ہیں ۔

    • Share this:
      نوئیڈا : اترپردیش کے گوتم بدھ نگر پولیس نے ایک سپا سینٹر پر چھاپہ مار کر سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش کیا ہے ۔ پولیس نے اس دوران 14 لڑکیوں اور پانچ لڑکوں کو گرفتار کیا ہے ۔ چھاپہ ماری کے دوران لڑکے اور لڑکیاں قابل اعتراض حالت میں پائے گئے ۔ جائے واقعہ سے قابل اعتراض اشیا بھی برآمد کی گئی ہیں ۔ پولیس بھی گرفتار لڑکے اور لڑکیوں کو کارروائی کیلئے تھانہ لے گئی ۔ یہ معاملہ نوئیڈا کے تھانہ 58 حلقہ میں ایک واقع ایک شوپرکس مال میں پیش آیا ۔ دس دنوں کے اندر جسم فروشی کا گوتم بدھ نگر میں یہ دوسرا معاملہ سامنے آیا ہے ۔ اس سے پہلے گریٹر نوئیڈا میں پولیس نے ہوٹل میں چل رہے سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش کیا تھا ۔

      بتادیں کہ تقریبا دس دنوں پہلے گریٹر نوئیڈا میں ایک ہائی پروفائل سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش ہوا تھا ۔ پولیس نے اس دوران تیرہ لڑکیوں اور گیارہ لڑکوں کو گرفتار کیا تھا ۔ جبکہ اس معاملہ میں چار کانسٹیبل اور ایک ہیڈ کانسٹیبل کے ساتھ پولیس گاڑی کے ڈرائیور کو لائن حاضر کردیا گیا تھا ۔

      گریٹر نوئیڈا کی پولیس جب دنکور تھانہ علاقہ کے چینٹی علاقہ میں واقع نیو کراون پلازہ ہوٹل پہنچی تو وہ حیران رہ گئی ۔ اس دوران 12 لڑکیاں اور 11 لڑکے مشتبہ حالت میں ملے ۔ صاف ہے کہ اس ہوٹل میں سیکس ریکیٹ چل رہا تھا ۔ گریٹر نوئیڈا دوئم اے سی پی برج نندن رائے کی قیادت میں پولیس نے ہوٹل میں دبش دی اور 12 خواتین سمیت 23 لوگوں کو گرفتار کیا ۔ یہی نہیں اس سیکس ریکیٹ میں ہوٹل کا منیجر بھی شامل پایا گیا ہے ۔

      سیکس ریکیٹ کا پردہ فاش کرنے کی کارروائی کی خبر دنکور پولیس کو بھی نہیں تھی ، کیونکہ مقامی پولیس کا کردار بھی مشکوک نظر آرہا تھا ۔ بتادیں کہ اس معاملہ کی جانچ پولیس کمشنر آلوک سنگھ نے شروع کی ہے ۔ اب تک اس معاملہ میں چار کانسٹیبل ، ایک ہیڈ کانسٹیبل اور ایک ڈرائیور کو لائن حاضر کیا گیا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: