உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ’’نصیر الدین شاہ، شبانہ اعظمی اور جاوید اختر ٹکڑے ٹکڑے گینگ کے سلیپر سیل کے ممبر‘‘ Narottam Mishra

    یہ ان کی ذہنیت کی عکاسی کرتی ہے۔

    یہ ان کی ذہنیت کی عکاسی کرتی ہے۔

    Tukde tukde Gang: مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا نے کہا کہ مجھے بتائیں کہ کیا انھوں نے ادے پور میں کنہیا لال (Kanhaiya Lal) کے قتل پر کچھ کہا تھا، نہیں انھوں نے کچھ بھی نہیں کہا۔ یہ ان کی ذہنیت کی عکاسی کرتی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | Hyderabad | Mumbai | Lucknow | Bihar Sharif
    • Share this:
      مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا (Narottam Mishra) نے ہفتہ کو اداکار شبانہ اعظمی (Shabana Azmi)، نصیر الدین شاہ (Naseeruddin Shah) اور گیت نگار جاوید اختر (Javed Akhtar) کو ٹکڑے ٹکڑے گینگ کے سلیپر سیل کے رکن قرار دیا ہے۔ مشرا نے ان پر راجستھان کے ادے پور میں ایک درزی کے قتل اور جھارکھنڈ میں حال ہی میں ایک خاتون کو جلانے کی مذمت نہ کرنے کا الزام لگایا اور کہا کہ یہ ان کی سستی ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے۔ نروتم مشرا نے کہا کہ حال ہی میں جھارکھنڈ میں ہماری بیٹی کو آگ لگا دی گئی۔ کیا انھوں نے کچھ کہا ہے؟ نہیں! پھر ایک ایوارڈ واپس کرنے والا گینگ ہے جو سرگرم ہو جائے گا اور وہ چیخیں گے۔

      انہوں نے کہا کہ یہ ان کی سستی ذہنیت کی عکاسی کرتا ہے۔ انہیں مہذب یا سیکولر کیسے کہا جا سکتا ہے؟ یہ سوچنے والی بات ہے۔ وہ بہت جلد بے نقاب ہوجائیں گے۔ دراصل شبانہ اعظمی، جاوید اختر اور نصیر الدین شاہ جیسے لوگ ٹکڑے ٹکڑے گینگ کے سلیپر سیل کے رکن ہیں۔

      یہ بھی پڑھیں:

      نصیرالدین شاہ نے طالبان کی حمایت کرنے والے ہندوستانی مسلمانوں پر کی تنقید، کہا- جشن منانا اور بھی خطرناک


      مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا نے کہا کہ مجھے بتائیں کہ کیا انھوں نے ادے پور میں کنہیا لال (Kanhaiya Lal) کے قتل پر کچھ کہا تھا، نہیں انھوں نے کچھ بھی نہیں کہا۔ یہ ان کی ذہنیت کی عکاسی کرتی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: