உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شاہی امام کی وزیراعظم سے ملاقات،مسلم نوجوانوں کی گرفتاریوں پراظہار تشویش

    وزیر اعظم مودی، سید احمد بخاری: فائل فوٹو

    وزیر اعظم مودی، سید احمد بخاری: فائل فوٹو

    نئی دہلی۔ ملک میں آئی ایس آئی ایس (داعش) سے وابستگی اور مبینہ طور پر دہشت گردانہ سرگرمیوں میں مسلم نوجوانوں کی گرفتاریوں پر شدید تشویش ظاہرکرتے ہوئے شاہی امام مولاناسیداحمد بخاری نے وزیراعظم نریندر مودی سے مطالبہ کیاہے کہ ان گرفتاریوں میں پوری طرح شفافیت ہونی چاہئے اور ملک کو یہ بتاناچاہئے کہ ان کی سرگرمیاں کس نوعیت کی ہیں تاکہ یہ اندازہ لگایاجاسکے کہ الزامات میں کتنا دم ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔ ملک میں آئی ایس آئی ایس (داعش) سے وابستگی اور مبینہ طور پر دہشت گردانہ سرگرمیوں میں مسلم نوجوانوں کی گرفتاریوں پر شدید تشویش ظاہرکرتے ہوئے شاہی امام مولاناسیداحمد بخاری نے وزیراعظم نریندر مودی سے مطالبہ کیاہے کہ ان گرفتاریوں میں پوری طرح شفافیت ہونی چاہئے اور ملک کو یہ بتاناچاہئے کہ ان کی سرگرمیاں کس نوعیت کی ہیں تاکہ یہ اندازہ لگایاجاسکے کہ الزامات میں کتنا دم ہے۔ وزیراعظم مسٹرنریندر مودی سے  یہاں انکی رہائش گاہ پر ملاقات کے دوران امام بخاری نے وزیراعظم کو مسلمانوں میں ان گرفتاریوں پرپائی جانے والی تشویش سے آگاہ کیا اور کہاکہ ماضی میں دہشت گردی کے نام پر اندھادھند گرفتاریوں کی وجہ سے بے گناہ مسلم نوجوانوں اور انکے خاندان کی زندگیاں برباد ہوئی ہیں اور ماضی کے تجربہ کی بنیاد پر اب گرفتاریوں کا جو سلسلہ شروع ہوا ہے اس سے مسلمانوں میں شدید بے چینی پائی جاتی ہے ۔ وزیراعظم سے آدھ گھنٹہ کی ملاقات میں انہوں نے کہاکہ دہشت گردی کے الزام میں متعددمسلم نوجوان پچھلے دس پندرہ برسوں سے جیلوں میں بندہیں اور ان کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔


      علی گڑھ مسلم یونیورسٹی اور جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اقلیتی کردار پر مرکزی سرکار کے موقف کاذکر کرتے ہوئے امام بخاری نے کہاکہ ان دو مسلم اداروں کے اقلیتی کردارکے تعلق سے سپریم کورٹ میں اختیار کئے گئے موقف نے مسلمانوں میں تشویش پیداکردی ہے۔ انہوں نے وزیراعظم سے مطالبہ کیاکہ مرکزی سرکارکو اپنے اس موقف پر فوری طورپرنظرثانی کرنی چاہئے تاکہ مسلمانوں میں پائی جانے والی بے چینی اور تشویش کو دورکیاجاسکے۔
      وزیراعظم نے ان مسائل پر غورکرنے کا وعدہ کیا اور کہاکہ ان کی سرکار ایساکوئی قدم نہیں اٹھائیگی جس سے ملک کی فرقہ وارانہ ہم آہنگی پر آنچ آئے


      پریس ریلیز کے مطابق شاہی امام مولانا سید احمد بخاری کی قیادت میں علی گڑھ یونیورسٹی اور جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی سے وابستہ ذمہ داران پر مشتمل ایک وفد وزیراعظم نریندر مودی سے پارلیمنٹ کے بجٹ اجلاس کے بعد ملاقات کرے گا۔

      First published: