ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

واٹر ٹینک گھوٹالہ : شیلا دکشت نے توڑی خاموشی ، کہا : میرے خلاف الزام سیاست پر مبنی

نئی دہلی : کانگریس کی سینئر لیڈر اور دہلی کی سابق وزیر اعلی شیلا دکشت نے واٹر ٹینک گھپلہ میں ان پر لگائے گئے الزامات کو سیاست پر مبنی قرا ر دیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 17, 2016 04:54 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
واٹر ٹینک گھوٹالہ : شیلا دکشت نے توڑی خاموشی ، کہا : میرے خلاف الزام سیاست پر مبنی
فائل تصویر

نئی دہلی : کانگریس کی سینئر لیڈر اور دہلی کی سابق وزیر اعلی شیلا دکشت نے واٹر ٹینک گھپلہ میں ان پر لگائے گئے الزامات کو سیاست پر مبنی قرا ر دیا ہے۔ اس مبینہ گھپلہ کی تفتیش کے لئے عام آدمی پارٹی حکومت کی جانب سے لیفٹیننٹ گورنر نجیب جنگ کو بھیجے گئے خط کو ان کے ذریعہ اینٹی کرپشن بیورو کو منتقل کئے جانے کے ایک دن بعد آج محترمہ دکشت نے اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جسے گھپلہ بتایا جا رہا ہے اس میں کوئی حقیقت نہیں ہے. ان کے دور حکومت میں 2012 میں جل بورڈ کے واٹر ٹینکروں کو کرایہ پر لینے کے طریقہ کار پر صحیح طرح سے عمل کیا گیا تھا ۔ اس میں کوئی بے ضابطگی نہیں ہوئی تھی.تمام الزامات جھوٹے اور سیاست پر مبنی ہیں۔

محترمہ دکشت نے کہا کہ ان ٹینکروں کو لوگوں کے فائدے کے لئے کرایہ پر لیا گیا تھا۔ آج تک ان ٹینکروں کا استعمال کیا جا رہا ہے۔ اس میں گھپلہ کا سوال کہاں سے پیدا ہو گیا۔ انہوں نے کہا کہ ٹینکروں کو کرایہ پر لینے کا فیصلہ جل بورڈ نے متفقہ طور پر لیا تھا جس میں بھارتیہ جنتا پارٹی اور دہلی میونسپل کارپوریشن کے رکن بھی شامل تھے۔ سابق وزیر اعلی شیلا دکشت نے مبینہ گھپلہ کی رپورٹ اینٹی کرپشن بیورو کو بھیجے جانے کے سوال پر کہا کہ اس بارے میں دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال اور مسٹر نجیب جنگ ہی بتا سکتے ہیں۔

ٹینکر گھپلہ پر دہلی حکومت کی جانب سے بھیجی گئی رپورٹ کو مسٹر جنگ نے کل اینٹی کرپشن بیورو کو منتقل کر دیا تھا۔ مسٹر کیجریوال نے ٹینکر گھپلہ کے سلسلے میں محترمہ دکشت کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ ان کی حکومت نے گزشتہ برس جون میں ٹینکر گھپلہ کے حقائق معلوم کرنے کے لئے ٹیم قائم کی تھی. یہ معاملہ کانگریس حکومت کے دور حکومت میں 2012 میں دہلی جل بورڈ کے ذریعہ ا سٹیل کے 385 واٹر ٹینکر کرایہ پر لئے جانے سے منسلک ہے۔

First published: Jun 17, 2016 04:53 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading