உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شیلا دکشت کو دہلی کانگریس میں جان پھونکنے کی ذمہ داری

    فائل تصویر

    فائل تصویر

    دہلی میں اپنی کھوئی زمین کومضبوط کرنے کی پہل میں سرگرم کانگریس نےسینئر کانگریسی رہنما شیلا دکشت کو ایک بار پھر ریاستی کانگریس کی کمان سونپی ہے

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      دہلی میں اپنی کھوئی زمین کومضبوط کرنے کی پہل میں سرگرم کانگریس نےسینئر کانگریسی رہنما شیلا دکشت کو ایک بار پھر ریاستی کانگریس کی کمان سونپی ہے۔  پنجاب کے کپورتھلہ میں 31 مارچ1938 میں پیدا ہونے والی محترمہ دکشت 1998 سے 2013 تک 15 برسوں تک مسلسل دہلی کی وزیر اعلی رہیں ۔

      شیلا دکشت 2013 میں اروند کیجریوال سے گول مارکیٹ اسمبلی سے انتخاب ہار گئی تھیں ۔ اس اسمبلی انتخاب میں کسی بھی جماعت کو اکثریت نہیں ملی تھی ۔ کانگریس کی حمایت سے کیجریوال کی قیادت میں عام آدمی پارٹی (اے اے پی) کی حکومت 49 دن تک چلی تھی۔ اس کے بعد کانگریس کا 2015 اسمبلی کے انتخابات میں مکمل طور پر صفایا ہو گیا تھا۔دہلی کے وزیر اعلی کے عہدے سے ہٹنے کے بعد 11 مارچ 2014 کو کیرالہ کاگورنر بنا یا گیا تھا اور مرکز میں مودی حکومت بننے کے بعد انہوں نے 25 اگست 2014 کو گورنر کے عہدے سے استعفی دے دیاتھا۔
      اتردیش پردیش کی اسمبلی 2017 میں ہونے والے انتخابات میں کانگریس نے محترمہ دکشت کو وزیر اعلی کے عہدے کے لئے امیدوار اعلان کیا گیا تھا لیکن بعد میں اس کا نام واپس لے لیا گیا اور پارٹی نے سماجوی پارٹی (ایس پی) کے ساتھ مل کر انتخاب لڑا تھا ۔ محترمہ دکشت اترپردیش سے 1984 سے 89 تک قنوج سے رکن پارلیمان بھی رہیں۔

       
      First published: