உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شیلا دکشت نے سنبھالی دہلی کانگریس کی کمان، عام آدمی پارٹی سے اتحاد پرکہی یہ بات

    شیلادکشت نے دہلی کانگریس صدر کا چارج سنبھالا۔

    شیلادکشت نے دہلی کانگریس صدر کا چارج سنبھالا۔

    سابق وزیراعلیٰ نے کہا کہ بی جے پی اورعام آدمی پارٹی دونوں چیلنج ہیں۔ سمجھا جارہا ہے کہ شیلا کی تاجپوشی سے سیاسی تبدیلی کی جھلک دکھائی دے سکتی ہے۔

    • Share this:
      دہلی کی سابق وزیراعلیٰ شیلا دکشت نے دہلی پردیش کانگریس کمیٹی (ڈی پی سی سی) کے صدرکا عہدہ سنبھال لیا ہے۔ انہوں نے عام آدمی پارٹی سے اتحاد کولےکرکہا ہے کہ اس پر ابھی تک کوئی فیصلہ نہیں لیا ہے۔ شیلا دکشت نے کہا کہ سیاست چیلنج سے پُرہے، ہم اسی کے مطابق حکمت عملی بنائیں گے۔ اس موقع پردہلی کے تینوں کارگزار صدر ہارون یوسف، راجیش للوٹھیا اوردیویندریادو نے بھی چارج لیا۔ وہیں ہزاروں کارکنان کے علاوہ پارٹی کے کئی سینئرلیڈروں نے بھی شرکت کی۔

      شیلا دکشت نے کہا کہ بی جے پی اورعام آدمی پارٹی دونوں ایک چیلنج ہیں، ہم مل کرچیلنج کا سامنا کریں گے۔ عام آدمی پارٹی کے ساتھ اتحاد پرابھی تک کچھ نہیں ہوا ہے۔ واضح رہے کہ شیلادکشت کی تاجپوشی کے ذریعہ دہلی میں سیاسی تبدیلی کی جھلک دیکھی جاسکتی ہے۔ اس سے قبل سابق ریاستی صدراجے ماکن نے اپنی بیماری کا حوالہ دیتے ہوئے استعفیٰ دے دیا تھا۔

      اسمبلی انتخابات 2015 میں پارٹی کی شکست کے بعد جب اروندرسنگھ لولی نے اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے استعفیٰ دے دیا تھا۔ اس کے بعد اجے ماکن کوریاستی صدربنایا گیا تھا۔ حالانکہ چارسال میں اجے ماکن کولے کراندرونی اختلافات شروع ہوگئے تھے۔ میونسپل کارپوریشن انتخابات میں بھی کانگریس کو شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

      اجے ماکن کے استعفیٰ دینے کے بعد حال ہی میں دہلی کی سابق وزیراعلیٰ شیلا دکشت کو دہلی کانگریس کی ذمہ داری ایک بارپھرسونپی گئی ہے۔ حالانکہ انہیں تین اورسپہ سالارہارون یوسف، راجیش للوٹھیا اوردیویندریادو کی شکل میں دیئے گئے ہیں، جوان کے ساتھ مل کرکارگزارصدرکی حیثیت سے کام کریں گے۔ یہ تینوں لیڈرشیلا دکشت کے قریبی رہے ہیں اوران کے ماتحت کام بھی کرچکے ہیں۔ سابق ریاستی وزیراوربلیماران اسمبلی حلقہ کی پانچ بارنمائندگی کرنے والے ہارون یوسف توشیلا دکشت کی قیادت والی تینوں حکومت میں وزیررہے ہیں۔
      First published: