ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شیو سینا کا جموں و کشمیر کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے والے آرٹیکل 370 کو ہٹانے کا مطالبہ

شیوسینا اور بھارتیہ جنتا پارٹی نے جموں کشمیر کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے والے آرٹیکل 370 کو ہٹانے کا آج لوک سبھا میں پرزور مطالبہ کیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Aug 02, 2017 08:52 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
شیو سینا کا جموں و کشمیر کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے والے آرٹیکل 370 کو ہٹانے کا مطالبہ
شیوسینا اور بھارتیہ جنتا پارٹی نے جموں کشمیر کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے والے آرٹیکل 370 کو ہٹانے کا آج لوک سبھا میں پرزور مطالبہ کیا۔

نئی دہلی: شیوسینا اور بھارتیہ جنتا پارٹی نے جموں کشمیر کو خصوصی ریاست کا درجہ دینے والے آرٹیکل 370 کو ہٹانے کا آج لوک سبھا میں پرزور مطالبہ کیا۔ قومی جمہوری اتحاد کے اتحادی شیوسینا کے آنندراوت اڈسل نے اشیا اور سروس ٹیکس (جموں و کشمیر تک توسیع) بل 2017 پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ انتخاب آنے پر دفعہ 370 ہٹانے کی بات اشتہاری مہم میں کی جاتی رہی ہے۔ بہت کوششوں کے بعد اب جموں و کشمیر میں بھارتیہ جنتا پارٹی حکومت میں اتحادی ہے اور مرکز میں بھی اس کی اکثریت کی حکومت ہے۔

ایوان میں موجود مسٹر ارون جیٹلی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا، ’’اس وقت آپ کے پاس خزانہ اور دفاع دونوں وزارت ہے۔ آپ کسی کی پرواہ مت کیجئے اور آرٹیکل 370 کو ہٹانے کی کارروائی شروع کیجیے‘‘۔ مسٹر جیٹلی نے میز تھپتھپاكر مسٹر اڈسول کی تقریر کا خیر مقدم کیا۔

لداخ سے بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ تھپستان چھوانگ نے مسٹر اڈسل کے مطالبہ کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ جموں کشمیر کی اکثریتی عوام کے احساس کو ذہن میں رکھتے ہوئے آرٹیکل 370 کو ہٹانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ آبادی اور زمینی حقائق کے مطابق جموں اور لداخ وادی کشمیر سے کہیں زیادہ بڑے ہیں۔ لہذا جموں کشمیر کی جب بھی بات کرنی ہو تو پوری ریاست کے لوگوں کی بات کرنی چاہئے۔

First published: Aug 02, 2017 08:51 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading