ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شجاعت بخاری کے قتل کے خلاف کشمیری صحافیوں کا خاموش احتجاج، ’کینڈل لائٹ وجل‘ کا بھی اہتمام کیا

کشمیری صحافیوں نے پیر کی شام یہاں سرکردہ صحافی سید شجاعت بخاری کے قتل کے خلاف خاموش احتجاج کیا اور’کینڈل لائٹ وجل‘ کا اہتمام کیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 02, 2018 09:20 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
شجاعت بخاری کے قتل کے خلاف کشمیری صحافیوں کا خاموش احتجاج، ’کینڈل لائٹ وجل‘ کا بھی اہتمام کیا
شجاعت بخاری ۔ فائل فوٹو

سری نگر:  کشمیری صحافیوں نے پیر کی شام یہاں سرکردہ صحافی سید شجاعت بخاری کے قتل کے خلاف خاموش احتجاج کیا اور’کینڈل لائٹ وجل‘ کا اہتمام کیا۔  مختلف مقامی، قومی اور بین الاقوامی میڈیا اداروں سے وابستہ درجنوں صحافی پیر کی شام یہاں پولو ویو میں واقع پریس کلب (ایوان صحافت) کے باہر جمع ہوئے اور خاموش احتجاج درج کرنے کے علاوہ ’کینڈل لائٹ وجل‘ کا بھی اہتمام کیا۔


اس خاموش احتجاج اور ’کینڈل لائٹ وجل‘ کا اہتمام کشمیرورکنگ جرنلسٹس ایسوسی ایشن نے ینگ جرنلسٹس ایسوسی ایشن، ویڈیو جرنلسٹس ایسوسی اور کشمیر ٹی وی جرنلسٹس ایسوسی ایشن کے باہمی اشتراک سے کیا۔


اس سے قبل 26 جون کو کشمیری صحافیوں اور مقامی اخبارات کے مالکان نے شجاعت بخاری کے قتل اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے باغی ممبر اسمبلی چودھری لال سنگھ کی طرف سے کشمیری صحافیوں کو دی گئی دھمکی کے خلاف خاموش احتجاجی مارچ نکالا تھا۔ یہ خاموش احتجاجی مارچ پریس کالونی سے لالچوک کے تاریخی گھنٹہ گھر تک نکالا گیا تھا۔


واضح رہے کہ قریب تین دہائیوں تک میڈیا سے وابستہ رہنے والے شجاعت بخاری کو 14 جون کی شام نامعلوم بندوق برداروں نے پریس کالونی سری نگر میں اپنے دفتر کے باہر نذدیک سے گولیوں کا نشانہ بناکر قتل کردیا۔ حملے میں اُن کے دو ذاتی محافظین عبدالحمید اور ممتاز احمد کو بھی قتل کیا گیا تھا۔ شجاعت بخاری انگریزی روزنامہ ’رائزنگ کشمیر‘، اردو روزنامہ ’بلند کشمیر‘، کشمیری روزنامہ ’سنگرمال‘ اور ہفتہ وار اردو میگزین ’کشمیر پرچم‘ کے مدیر اعلیٰ تھے۔

ریاستی پولیس کا دعویٰ ہے کہ شجاعت بخاری اور اُن کے دو ذاتی محافظین کے قتل میں پاکستانی جنگجو تنظیم لشکر طیبہ ملوث ہے۔ پولیس کے مطابق قتل کی یہ سازش پاکستان میں رچی گئی اور اس کو یہاں شری مہاراجہ ہری سنگھ (ایس ایم ایچ ایس) اسپتال سے فرار ہونے والے پاکستانی جنگجو نوید جٹ سمیت لشکر طیبہ کے تین جنگجوؤں نے انجام دیا۔
First published: Jul 02, 2018 09:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading