உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Social Media: جمہوریت کوہیک کرنےسوشل میڈیاکاہورہاہےغلط استعمال، کانگریس صدرسونیا گاندھی کی ’گرجدار‘ تقریر

    Youtube Video

    اپنے خطاب میں سونیا گاندھی نے حکومت پر زور دیا کہ دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کی انتخابی سیاست میں فیس بک اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمس کے منظم اثر و رسوخ اور مداخلت کو ختم کیا جانا جمہوریت کی بقا کے لیے ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ پارٹیوں اور سیاست سے بالاتر ہے۔ ہمیں اپنی جمہوریت اور سماجی ہم آہنگی کی حفاظت کرنے کی ضرورت ہے، چاہے کوئی بھی اقتدار میں ہو۔

    • Share this:
      بدھ کو لوک سبھا میں تقریر کرتے ہوئے کانگریس کی عبوری صدر سونیا گاندھی (Sonia Gandhi) نے کہا کہ ’’ہماری جمہوریت کو ہیک کرنے‘‘ کے لیے سوشل میڈیا کا غلط استعمال کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فیس بک اور ٹویٹر جیسے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر ہندوستان میں سیاسی بیانیہ ترتیب دینے کے لیے جوڑ توڑ پیش کیا جا رہا ہے۔

      سونیا گاندھی نے کہا کہ فیس بک اور ٹویٹر جیسی عالمی کمپنیوں کو لیڈروں، پارٹیوں اور ان کے پراکسیز (مخالف عناصر) کی جانب سے سیاسی بیانیے کی شکل دینے کے لیے تیزی سے استعمال کیا جا رہا ہے۔ یہ سیاسی بیانیہ ترتیب دینے کے لیے ان سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کے ساتھ حکمران اسٹیبلشمنٹ کی ملی بھگت کو ظاہر کرتا ہے، جو کہ جمہوریت اور جمہوریت کے لیے مددگار نہیں ہے۔

      سونیا گاندھی نے کہا کہ عالمی سوشل میڈیا کمپنیاں تمام سیاسی جماعتوں کو برابری کا میدان فراہم نہیں کر رہی ہیں۔ مزید انہوں نے کہا کہ فیس بک کا استعمال سماجی ہم آہنگی کو بگاڑنے کے لیے کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے لوک میں کہا کہ یہ بارہا عوامی نوٹس میں آیا ہے کہ عالمی سوشل میڈیا کمپنیاں تمام فریقوں کو برابری کا میدان فراہم نہیں کر رہی ہیں۔ یہ ایک صریح طریقہ ہے جس میں فیس بک کے ذریعے سماجی ہم آہنگی کو خراب کیا جا رہا ہے۔

      مزید پڑھیں: اقوام متحدہ جنرل اسمبلی کی جانب سے ہرسال 15 مارچ کوعالمی یوم Islamophobia منانے کا اعلان، ہندوستان کو تشویش

      انہوں نے مزید کہا کہ جذباتی طور پر چارج شدہ غلط معلومات کے ذریعے نوجوان اور بوڑھے ذہنوں کو نفرت سے بھرا جا رہا ہے اور فیس بک جیسی پراکسی اشتہاری کمپنیاں اس سے آگاہ ہیں اور اس سے فائدہ اٹھا رہی ہیں۔ رپورٹس بڑی کارپوریشنوں، حکمران اسٹیبلشمنٹ اور عالمی سوشل میڈیا کے بڑے اداروں کے درمیان بڑھتے ہوئے گٹھ جوڑ کو ظاہر کرتی ہیں۔

      مزید پڑھیں: Bhopal News: کشمیر طالبہ سعدیہ طارق کا ایشین یوتھ گیمس کیلئے ہوا سلیکشن، سماجی تنظیموں نے کیا پرتپاک استقبال



      سونیا نے حکومت پر زور دیا:

      اپنے خطاب میں سونیا گاندھی نے حکومت پر زور دیا کہ دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کی انتخابی سیاست میں فیس بک اور دیگر سوشل میڈیا پلیٹ فارمس کے منظم اثر و رسوخ اور مداخلت کو ختم کیا جانا جمہوریت کی بقا کے لیے ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ پارٹیوں اور سیاست سے بالاتر ہے۔ ہمیں اپنی جمہوریت اور سماجی ہم آہنگی کی حفاظت کرنے کی ضرورت ہے، چاہے کوئی بھی اقتدار میں ہو۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: