اپنا ضلع منتخب کریں۔

    سیاسی مخالفین کو سرکاری اداروں کے ذریعے نشانہ بنایا جا رہا ہے: سونیا گاندھی

     کانگریس کی سابق صدر سونیا گاندھی نے آج مرکزی حکومت پر انتخابات کے پیش نظر سماج کو بانٹنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ سرکاری اداروں کے ذریعے سیاسی مخالفین کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

    کانگریس کی سابق صدر سونیا گاندھی نے آج مرکزی حکومت پر انتخابات کے پیش نظر سماج کو بانٹنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ سرکاری اداروں کے ذریعے سیاسی مخالفین کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

    کانگریس کی سابق صدر سونیا گاندھی نے آج مرکزی حکومت پر انتخابات کے پیش نظر سماج کو بانٹنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ سرکاری اداروں کے ذریعے سیاسی مخالفین کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: ترقی پسند اتحاد (یو پی اے) کی چیئر پرسن اور کانگریس کی سابق صدر سونیا گاندھی نے آج مرکزی حکومت پر انتخابات کے پیش نظر سماج کو بانٹنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ سرکاری اداروں کے ذریعے سیاسی مخالفین کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

      سونیا گاندھی نے اگلے سال ہونے والے عام انتخابات کا بگل بجانے کے لئے یہاں رام لیلا میدان مین منعقد ہ کانگریس کی 'جن آکروش' ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جو لوگ ہماری گنگا جمنی تہذیب کو تباہ کرنا چاہتے ہیں ہم ان کا ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔
      انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں ملک مشکل دور سے گزر رہا ہے۔ اس کے پیش نظر ہم وطنوں کو متحد ہونے اور محتاط رہنے کی اپیل کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سیاسی مخالفیران کو سرکاری اداروں کے ذریعے نشانہ بنایا جا رہا ہے۔
      سونیا گاندھی نے کانگریس صدر راہل گاندھی کی قیادت میں ملک کو بچانے کے لئے لوگوں سے عزم کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ملک کو منصفانہ اور مضبوط آئینی اداروں کی ضرورت ہے۔انہوں نے ریلی میں آنے والے لوگوں کی طرف سے کی جا رہی نعرے بازی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ جو غصہ یہاں دکھائی دے رہا ہے وہ ملک کے ہر كونے میں نظر آ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تشدد اور نفرت انگیزی سے پورا سماج پریشان ہے۔ ہر طبقہ کے لوگ اس سے متاثر ہیں۔ وزیر اعظم کے بطور اقتدار میں آنے کے لئے مسٹر مودی کی طرف کئے گئے سارے وعدے کھوکھلے ثابت ہوئے ہیں۔ خواتین کی ہراسانی بڑھی اور یہاں تک کہ چھوٹی چھوٹی کمسن اور نوزائیدہ بچیاں بھی اب محفوظ نہیں ہیں اور حکومت مجرموں کو بچا رہی ہے۔
      انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کے لئے دو کروڑ روزگار دینے کے وعدے کئے گئے تھے لیکن کسی کو کچھ نہیں ملا۔ نوجوانوں کو اب بھی روزگار کی تلاش ہے اور انہیں اب پتہ چل چکا ہے کہ مودی جی نے انہیں ٹھگا ہے اور دھوکہ کیا ہے۔ ملک میں بے روزگاری میں اضافہ ہوا ہے اور کسان خودکشی کر رہے ہیں اور بھارتیہ جنتا پارٹی ان کے لئے کچھ بھی نہیں کر رہی ہے۔
      First published: