ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

غیر مقامی مزدوروں کو ان کے گھروں تک پہنچانے کے لیے سماجی اور سیاسی شخصیات کی خصوصی خدمات

لاک ڈاؤن کے دوران مشکل حالات میں دو ماہ سے زیادہ کا وقت گزارنے کے بعد اب غیر مقامی مزدور اور کامگار کسی بھی صورت میں اپنے گھروں کو لوٹنے کے لیے بےچین ہیں لیکن ان غیر مقامی مزدوروں کو انکے وطن بھیجنے کے لیے تمام سرکاری انتظامات ناکافی ثابت ہو رہے ہیں۔

  • Share this:
غیر مقامی مزدوروں کو ان کے گھروں تک پہنچانے کے لیے سماجی اور سیاسی شخصیات کی خصوصی خدمات
لاک ڈاؤن کے دوران مشکل حالات میں دو ماہ سے زیادہ کا وقت گزارنے کے بعد اب غیر مقامی مزدور اور کامگار کسی بھی صورت میں اپنے گھروں کو لوٹنے کے لیے بےچین ہیں لیکن ان غیر مقامی مزدوروں کو انکے وطن بھیجنے کے لیے تمام سرکاری انتظامات ناکافی ثابت ہو رہے ہیں۔

لاک ڈاؤن کے دوران مشکل حالات میں دو ماہ سے زیادہ کا وقت گزارنے کے بعد اب غیر مقامی مزدور اور کامگار کسی بھی صورت میں اپنے گھروں کو لوٹنے کے لیے بےچین ہیں لیکن ان غیر مقامی مزدوروں کو انکے وطن بھیجنے کے لیے تمام سرکاری انتظامات ناکافی ثابت ہو رہے ہیں۔ حالانکہ ہزاروں کی تعداد میں غیر مقامی مزدوروں کو اب تک ٹرین اور بسوں کے ذریعہ انکے وطن واپس بھیجا جا چکا ہے لیکن ابھی بھی بڑی تعداد میں غیر مقامی مزدور اور کامگار ٹرین اور بس کے انتظار میں بس اڈوں اور اسٹیشنوں پر جانے کا انتظار کر رہے ہیں۔


ان حالات میں سرکاری انتظامات سے مایوس ہوکر پیدل ہی سڑکوں پر اپنی منزلوں کے لیے نکل چکے ان غریب مزدوروں کے لیے کئی سماجی اور سیاسی شخصیات کی خدمات مدد کا بڑا ذریعہ ثابت ہو رہی ہے۔ مغربی اُتر پردیش کے کاروباری اور صنعتی شہر میرٹھ سے بھی ان دنوں ہزاروں کی تعداد میں مزدور اور کامگار روزگار ختم ہو جانے سے  اپنے وطن کو ہجرت کرنے پر مجبور ہیں۔

لیکن میرٹھ میں ٹرین اور بس کا انتظار کرکے مایوس ہو چکے بہت سے افراد اب دلّی اور غازی آباد سے ٹرین کے ذریعہ اپنے گھروں کو پہنچنے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن دلّی اور غازی آباد جانے کے لیے کوئی سرکاری مدد دستیاب نہیں ہے۔ ایسے میں ان افراد کی مشکلات کو دیکھتے ہوئے سابق وزیر یو پی حکومت اور سماجوادی لیڈر شاہد منظور نے ذاتی طور ان کی مدد کی کوششیں انجام دی ہیں۔ اپنے گھر کے باہر سڑک پر جب ایسے مجبور افراد کو دیکھتے ہیں انکی مدد کرنے کی بھرپور کوشش کرتے ہیں ، شاہد منظور ان افراد کو دلّی اور غازی آباد اسٹیشن تک پہنچانے کے لیے نے صرف گاڑیوں کہ انتظام کر رہے ہیں بلکہ انکے کھانے پینے کا بھی انتظام کر رہے ہیں۔

First published: May 31, 2020 08:39 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading