உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ایکسکلوزیو: کسی فیڈریشن کی جاگیر نہیں ہیں کھلاڑی: راجیہ وردھن سنگھ راٹھور

    کھیلوں کے مرکزی وزیر مملکت راجیہ وردھن سنگھ راٹھور

    کھیلوں کے مرکزی وزیر مملکت راجیہ وردھن سنگھ راٹھور

    کھیلوں کے مرکزی وزیر مملکت راجیہ وردھن سنگھ راٹھور نے نیوز 18 کے ساتھ بات چیت میں کھیل تنظیموں کو تو خبردار کیا لیکن ان میں سیاست دانوں کا قبضہ ختم کرنے سے انکار کر دیا۔

    • Share this:
      نئی دہلی۔ ہندوستان میں کھلاڑی فیڈریشن یا کھیل یونینوں کے محتاج ہوتے ہیں۔ حکومت چاہ کر بھی ان کھیل یونینوں پر لگام نہیں لگا پاتی۔ لیکن، کھیلوں کے مرکزی وزیر مملکت راجیہ وردھن سنگھ راٹھور نے دعوی کیا ہے کہ اب ایسا نہیں ہوگا۔ راٹھور نے نیوز 18 کے ساتھ بات چیت میں کھیل تنظیموں کو تو خبردار کیا لیکن ان میں سیاست دانوں کا قبضہ ختم کرنے سے انکار کر دیا۔ ان کا ماننا ہے کہ مسئلہ سیاستداں یا کوئی خاص طبقہ نہیں بلکہ ذاتی سوچ ہے۔

      راٹھور نے دعویٰ کیا کہ آسٹریلیا میں جاری دولت مشترکہ کھیلوں میں ہندوستان کی کارکردگی کھلاڑیوں کی محنت کے ساتھ ساتھ حکومت کی کوششوں کا نتیجہ بھی ہے۔

      "ہم 8-12 سال کی عمر میں اسکول کی سطح پر ہی کھلاڑیوں کی شناخت کر لینا چاہتے ہیں۔ یہیں سے ان کی ٹریننگ اور کوچنگ میں سرمایہ کاری کرنا ہو گی اور اس میں ان کھلاڑیوں کے اسکول اور سرپرستوں کا خصوصی رول ہونا چاہئے۔

      وزیر کھیل نے بتایا کہ پیرامڈ اسٹرکچر میں کھیلوں کے لئے بنیادی سہولت مہیا کرانے اور اولمپک گیمز کے لئے ماحول بنانے پر زور دیا جا رہا ہے۔ اس میں کھیل تنظیموں کا بھی بڑا رول ہو گا۔ لیکن انہیں اپنا رویہ تبدیل کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ کھیل یونینوں کو کھیل اور کھلاڑیوں کو اپنی جاگیر نہیں سمجھنا چاہئے۔

      راٹھور نے کہا کہ " اس یقین کے ساتھ کہ جو کچھ بھی ہمیں کرنا ہے وہ مل جل کر کرنا ہے۔ کھیلوں کو جنہوں نے اپنی جاگیر بنا رکھا ہے، انہیں شفافیت لانی ہوگی اور نیا نظام اپنانا پڑے گا۔ کیونکہ جب کوئی کھلاڑی اپنے سینے پر ترنگا لگا کر کھیلتا ہے تب کوئی یہ نہیں کہہ سکتا کہ یہ میرا ہے اسے میں کھلاوں گا۔

      کھیل یونینوں پر سیاستدانوں کی گرفت کو ختم کر کے اسے کھلاڑیوں کو سونپنے کی بحث سے راٹھور نے اپنے عدم اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ سبھی یونین سربراہ سیاستدانوں کو ایک ہی چشمے سے نہیں دیکھا جانا چاہئے۔ 'مسئلہ سیاسی برادری کا نہیں بلکہ کسی خاص شخص میں ہوسکتا ہے۔ تمام یونینوں سے سیاستدانوں کو ہٹا دینا مسئلہ کا حل نہیں ہے۔ یہ ذاتی طور پر عہد بستگی کا معاملہ ہے۔

      آسٹریلیا میں جاری دولت مشترکہ کھیلوں میں ہندوستان کو مل رہی کامیابی پر خوشی ظاہر کرتے ہوئے راٹھور نے کہا کہ "ہم اس بار کم کھلاڑی بھیج کر بھی زیادہ تمغے لا رہے ہیں۔ ساتھ ہی ان کھیلوں میں بھی تمغے جیت رہے ہیں جن میں ہماری کارکردگی پہلے خراب رہتی تھی۔ یہ اچھی علامت ہے۔ '

      راٹھور نے دعوی کیا کہ ان کی حکومت ہندوستان میں کھیلوں کو فروغ دینے کے لئے ہر ممکن کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا، "اولمپک کھیلوں کو فروغ دینے کے لئے حکومت انٹرنیشنل اولمپک کمیٹی کے معیار کے مطابق اسکول کی سطح پر سے ہی کھیلوں کا انعقاد کر رہی ہے۔ کھیلو انڈیا اسی کا آغاز ہے۔
      First published: