உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    اگلے ہفتہ بازار میں اسپوتنک ، جانئے کووی شیلڈ ، کوویکسین اور روسی ٹیکہ میں کون کتنا موثر

    اگلے ہفتہ بازار میں اسپوتنک ، جانئے کووی شیلڈ ، کوویکسین اور روسی ٹیکہ میں کون کتنا موثر

    اگلے ہفتہ بازار میں اسپوتنک ، جانئے کووی شیلڈ ، کوویکسین اور روسی ٹیکہ میں کون کتنا موثر

    نیتی آیوگ کے رکن ڈاکٹر وی کے پال نے بتایا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ اگلے ہفتے تک اسپوتنک ویکسین ہندوستانی بازار میں آجائے گی ۔ ہندوستان میں اس ویکیسن کا پروڈکشن فارما کمپنی ڈاکٹری ریڈی کرے گی ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : روس کی ویکسین اسپوتنک وی اگلے ہفتے سے ہندوستان بازار میں دستیاب رہے گی ۔ 14 مئی یعنی کل ملک میں اسپوتنک کی دوسری کھیپ آجائے گی ۔ اس سے پہلے یکم مئی کو ڈیڑھ لاکھ ویکسین ڈوز کی پہلی کھیپ ہندوستان میں آئی تھی ۔ نیتی آیوگ کے رکن ڈاکٹر وی کے پال نے بتایا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ اگلے ہفتے تک اسپوتنک ویکسین ہندوستانی بازار میں آجائے گی ۔ ہندوستان میں اس ویکیسن کا پروڈکشن فارما کمپنی ڈاکٹری ریڈی کرے گی ۔

      اسپوتنک ہندوستان میں تیسری ویکسین ہوگی ۔ اس سے پہلے 16 جنوری میں ملک میں شروع ہوئے ویکسینیشن پروگرام کے دوران اب تک سیرم انسٹی ٹیوٹ کی کووی شیلڈ اور بھارت بایوٹیک کی کوویکسین کا استعمال کیا جاتا رہا ہے ۔ ان میں بھی کووی شیلڈ کا فیصد زیادہ رہا ہے ۔ اب اسپوتنک وی بھی آگئی ہے ۔

      کس ویکسین کی ایفیکیسی ریٹ سب سے زیادہ

      اسپوتنک وی نے تیسرے مرحلہ کے ٹرائل میں مضبوط امیونٹی دکھائی ہے۔ نتائج میں ۔۔۔ فیصد ایفیکیسی ریٹ سامنے آیا ہے ۔ وہیں کووی شیلڈ کی ایفیکیسی ریٹ تقریبا 70 فیصد ہے اور دوسرے ڈوز کے بعد یہ 90 فیصد تک جاسکتی ہے ۔ ہندوستان کی ملک میں تیار کی گئی ویکسین کوویکسین کے تیسرے مرحلہ کے ٹرائل میں ایفیکیسی ریٹ 81 فیصد رہی تھی ۔

      تینوں ویکسین ہیں کارگر ، کسی کا بھی ڈوز لیا جاسکتا ہے

      حالانکہ ویکسین کے ایفیکیسی ریٹ کو ہی موثر ہونے کا واحد پیمانہ نہیں مانا جاتا ہے ۔ ہندوستان میں اب تک ایکسپرٹس اور سرکاریں زور دے کر کہتی رہی ہیں کہ کووی شیلڈ یا کوویکسین میں کسی کا بھی استعمال کیا جاسکتا ہے ۔ دونوں ہی ویکسین کورونا وائرس کے خطرات کو کمزور کرنے میں یکساں طور پر موثر ہیں ۔

      ویکسین کی کمی سے متعلق ایشوز کو حل کیا جائے گا

      ڈاکٹر وی کے پال نے آج یہ بھی جانکاری دی ہے کہ ملک میں اگلے کچھ مہینے کے اندر ویکسین پروڈکشن میں بہت تیزی لائی جائے گی ۔ اگست میں دسمبر مہینے کے درمیان میں 216 کروڑ ویکسین ڈوز کے پاس موجود ہوں گے ۔ یہ ڈوز مختلف کمپنیوں کی ویکسین کی ہوں گی ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: