ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پارلیمانی پینل نے کی دہلی پولیس کی تنقید ، مستعدی میں اضافہ کیلئے کہا

نئی دہلی : پارلیمانی پینل نے دہلی پولیس کی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ خواتین کے خلاف جرائم پر نظر رکھنے میں انہیں اپنی ذمہ داریوں سے یقینی طور پر منہ نہیں موڑنا چاہئے بلکہ دارالحکومت میں لوگوں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے انہیں اپنی مستعدی دکھانی چاہئے۔

  • Agencies
  • Last Updated: Dec 13, 2015 01:45 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
پارلیمانی پینل نے کی دہلی پولیس کی تنقید ،  مستعدی میں اضافہ کیلئے کہا
نئی دہلی : پارلیمانی پینل نے دہلی پولیس کی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ خواتین کے خلاف جرائم پر نظر رکھنے میں انہیں اپنی ذمہ داریوں سے یقینی طور پر منہ نہیں موڑنا چاہئے بلکہ دارالحکومت میں لوگوں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے انہیں اپنی مستعدی دکھانی چاہئے۔

نئی دہلی : پارلیمانی پینل نے دہلی پولیس کی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ خواتین کے خلاف جرائم پر نظر رکھنے میں انہیں اپنی ذمہ داریوں سے یقینی طور پر منہ نہیں موڑنا چاہئے بلکہ دارالحکومت میں لوگوں کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے انہیں اپنی مستعدی دکھانی چاہئے۔


وزارت داخلہ کی مستقل پارلیمانی کمیٹی سے متعلقہ محکمہ نے بھی وزارت داخلہ کی اس درخواست کو مسترد کر دیا ، جس میں دہلی پولیس کے کردار کو محدود بتاتے ہوئے کئی سماجی ، اقتصادی اور مجرمانہ عوامل کو خواتین کے خلاف مجرمانہ رویہ کے لئے ذمہ دار بتایا گیا ہے۔


ان کا ماننا ہے کہ حکومت کو فارینسک جانچ کی سہولیات کو بہتر بنانے کے لئے فوری اقدامات اٹھانے چاہئیں۔


کمیٹی نے کہا ہے کہ وہ وزارت داخلہ کے اس موقف سے متفق نہیں ہے کہ خواتین کے خلاف جرائم کے زیادہ تر 96 فیصد معاملات میں ملزم متاثرہ کا شناسا ہوتا ہے۔ جبکہ محض چار فیصد کیسوں میں ہی دونوں اجنبی ہوتے ہیں۔ لہذا اس طرح کے جرم کو روکنے کے لئے پولیس کے علاوہ معاشرہ اور دیگر شہری ایجنسیوں پر بھی یکساں طور پر ذمہ داری عائد کی جانی چاہئے۔


کمیٹی نے اپنی 189 ویں رپورٹ میں کہا ہے کہ یہ کمیٹی سختی سے یہ سفارش کرتی ہے کہ دہلی پولیس کو خواتین کے خلاف جرائم کو روکنے کے لئے اپنی ذمہ داریوں سے راہ فرار اختیار کرنے کی بجائے اس طرح کے جرائم سے نمٹنے کے لئے مؤثر پالیسی اپنانی چاہئے۔


کمیٹی نے یہ مشورہ بھی دیا ہے کہ اگر ضرورت پڑے تو بلدیاتی اداروں اور سول سوسائٹیوں سمیت دیگر ایجنسیوں کو بھی اس عمل میں شامل کیا جا سکتا ہے۔ کمیٹی نے اعتراف کیا کہ دہلی پولیس کی پی سی آر گاڑی کی سہولت ایک مؤثر نظام ہے ، لیکن مسئلہ یہ ہے کہ کال سینٹر کو چلارہے اہلکاروں کو متاثرہ کی بتائی ہوئی جگہ کی شناخت یا جگہ کو سمجھنے یا سڑکوں اور دیگر مقامات کے نام کی شناخت کرنے میں دقت پیش آتی ہے۔


کمیٹی کے ارکان نے 29 جون کو دہلی پولیس ہیڈکوارٹر کا دورہ کیا تھا اور پولیس کمشنر اور دیگر حکام سے بھی بات چیت کی تھی۔

First published: Dec 13, 2015 01:45 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading