ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

میرٹھ : مدرسہ بورڈ میں دن بہ دن کم ہو رہی ہے طلبا و طالبات کی دلچسپی 

یوپی مدرسہ بورڈ امتحانات کے لئے اکیلے میرٹھ منڈل میں گزشتہ سال کے مقابلہ اس سال جہاں رجسٹریشن کی تعداد تقریباً ٤٠ فیصد کم ہو کر محض ٤١٥١ رہی وہیں امتحان چھوڑنے والوں کی تعداد بھی تقریبا ٢٥ فیصد رہی۔

  • Share this:
میرٹھ : مدرسہ بورڈ میں دن بہ دن کم ہو رہی ہے طلبا و طالبات کی دلچسپی 
میرٹھ : مدرسہ بورڈ میں دن بہ دن کم ہو رہی ہے طلبا و طالبات کی دلچسپی 

میرٹھ ۔ یو پی مدرسہ بورڈ کے امتحانات کی شروعات ٢٥ فروری  سے ہو چکی ہے۔ لیکن اس سال امتحان میں شامل ہونے والے طلباء اور طالبات کی تعداد گزشتہ سالوں کے مقابلے نہ صرف کافی کم درج کی گئی ہے بلکہ مدرسہ امتحان چھوڑنے والے طلباء و طالبات کی تعداد کی بڑی وجہ یوپی بورڈ اور مدرسہ بورڈ امتحان کے ایک ہی تاریخوں میں ہونا سمجھی جا رہی ہے۔


یوپی مدرسہ بورڈ امتحانات کے لئے اکیلے میرٹھ منڈل میں گزشتہ سال کے مقابلہ اس سال جہاں رجسٹریشن کی تعداد تقریباً ٤٠ فیصد کم ہو کر محض ٤١٥١ رہی وہیں امتحان چھوڑنے والوں کی تعداد بھی تقریبا ٢٥ فیصد رہی۔ ماہرین مانتے ہیں کہ یوپی بورڈ اور مدرسہ بورڈ امتحانات کے ایک ساتھ ہونے کے علاوہ اس کی دوسری بھی وجوہات رہی ہیں۔ مدرسہ ٹیچرس ایسوسی ایشن کے ضلع صدر کا کہنا ہے کہ مدارس میں ماہر اساتذہ سے لیکر تعلیمی ضروریات کی کمی بھی کم ہو رہے رجسٹریشن کی بڑی وجہ ہے۔


مدرسہ منتظمین کے مطابق وقت پر امتحان اور نتائج کے اعلان کو لیکر بورڈ کے نظام کا بہتر ہونا ضروری ہے۔


مدرسہ منتظمین کے مطابق وقت پر امتحان اور نتائج کے اعلان کو لیکر بورڈ کے نظام کا بہتر ہونا ضروری ہے۔ تاہم مدرسہ طالب علموں کے حق میں بہتری کے لئے دیگر بورڈ امتحانات کی تاریخوں کے ٹکراو سے بھی بچنا ضروری ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اکیلے میرٹھ  شہر کے تین مراکز پر اس سال امتحان سے غیر حاضر رہنے والوں میں زیادہ تعداد لڑکوں کی ہے۔
نقل کو لیکر بورڈ کی سختی اور  یو پی اور مدرسہ بورڈ امتحانات کی تاریخوں کا ایک ساتھ ہونا مدرسہ طلبا اور طالبات کے امتحان چھوڑنے کا ایک بڑا سبب ہو سکتا ہے لیکن مدارس کے لئے سرکاری انتظامات اور سہولیات میں کمی بھی طلبا اور طالبات کے رجحان میں کمی کی بڑی وجہ ثابت ہو رہی ہے۔
First published: Mar 02, 2020 06:29 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading