ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سوریگ نام کی دوا کے ذریعہ کورونا کی روک تھام کیلئے ملک بھر کے سائنسداں اور محققین سرگرم

سوریگ اس نظریہ پر کام کرے گا کہ بہت سے عام مرکبات جیسے شہد ، کیمپھور ڈیرائیوٹیو ، ہائیڈروجن سلفائیڈ ۔ کالا نمک ، یوکلپٹس کا تیل اور دیگر اشیا جسم سے باہر کورونا وائرس کو غیر فعال کرسکتے ہیں ۔

  • Share this:
سوریگ نام کی دوا کے ذریعہ کورونا کی روک تھام کیلئے ملک بھر کے سائنسداں اور محققین سرگرم
سوریگ نام کی دوا کے ذریعہ کورونا کی روک تھام کیلئے ملک بھر کے سائنسداں اور محققین سرگرم

ڈیپارٹمنٹ آف الیکٹریکل انجینئرنگ ، جامعہ ملیہ اسلامیہ کے پروفیسر منا خان ، جنہیں بایومیڈیکل انجینئرنگ میں مہارت حاصل ہے ، انہوں نے کورونا وائرس کی بیماری سے بچنے کے لئے ایک ناک کے اسپرے جس کا نام سوریگ رکھا گیا ہے کے منصرم بنائے ہیں ۔ ناک میں اس دوا کی پھوار کے ذریعہ کورونا کی روک تھام کی جائے گی ۔


ڈاکٹر منا خان کے مطابق یہ اہم کام ڈائریکٹرجنرل میڈیکل سروسز(ڈی جی ایم ایس) (ایئر) کے آئی آئی ٹی دہلی ، جامعہ ملیہ اسلامیہ ، ایمس ، سنٹر فار سیلولر اینڈ سالماتی حیاتیات (حیدرآباد میں ایک سی ایس آئی آر لیبارٹری) ، آرمڈ فورسز میڈیکل کالج پونے ، سکشا او انسواندھن یونیورسٹی بھونیشور اور آئی آئی ٹی کھڑک پور کے محققین  کی نگرانی میں کم لاگت ، آسانی سے دستیاب ، ارزاں اور صارف دوست سوریگ کی ترقی پر کام کر رہے ہیں ، جسے جلد ہی ایک سال کے اندر اندر وسیع تر استعمال کے لئے عام کر دیا جائے گا ۔


سوریگ اس نظریہ پر کام کرے گا کہ بہت سے عام مرکبات جیسے شہد ، کیمپھور ڈیرائیوٹیو ، ہائیڈروجن سلفائیڈ ۔ کالا نمک ، یوکلپٹس کا تیل اور دیگر اشیا جسم سے باہر کورونا وائرس کو غیر فعال کرسکتے ہیں ۔


میڈیکل سائنس میں پھیپھڑوں میں ناک سے دائیں ایلویلی (چھوٹے ہوائی بیگ) تک ہوا کی جگہ کو جسم کے باہر کا حصہ سمجھا جاتا ہے۔ سائنسی رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ کورونا وائرس جو حفاظتی ماسک سے ماورا ہو جاتا ہے جو کسی شخص کے ذریعے پہنا جاتا ہے اور اس سے جسم کے باہر ہوا کی جگہ داخل ہوتا ہے اور وہیں رہتا ہے وہ خون اور جسم کے بافتوں میں داخل نہیں ہوتا۔

سوریگ ’جسم کے باہر‘ ہوا کی جگہ پر کام کرے گا اور اسے ہوا کی جگہ کی سطح پر رکھا جائے گا جو ماسک سے گزرنے والے وائرس ، خون کے بہاؤ اور ٹشو میں داخل ہونے سے پہلے ہی غیر فعال کر دے گا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Oct 02, 2020 12:54 PM IST