ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شراب کی دکانیں بند کرانے پہنچے سپریم کورٹ، عدالت نے عرضی خارج کرکے لگایا 1لاکھ کا جرمانہ

بتادیں کہ لاک ڈاؤن 3.0 کے دوران 4 سے وزارت داخلہ نے شراب کی دکانیں کھولنے کی اجازت دی۔ اس بابت وزارت داخلہ نے کہا تھا کہ کنٹینمینٹ زون یعنی وہ علاقے جہاں کوروناوائرس متاثر لوگوں کی تعداد زیادہ ہے وہاں شراب کی دکانیں نہیں کھلیں گی۔ اس کے علاوہ ریڈ زون، اورینج، اور گرین زون میں شراب کی دکانیں کھلیں گی۔

  • Share this:
شراب کی دکانیں بند کرانے پہنچے سپریم کورٹ، عدالت نے عرضی خارج کرکے لگایا 1لاکھ کا جرمانہ
سپریم کورٹ نے کہا- ریزرویشن کا حق بنیادی حق نہیں

کوروناوائرس کے چلتے ملک بھر لاک ڈاؤن نافذہے۔ اسی درمیان شراب کی دکانوں کوبند کرانے کیلئے دائر کی گئی ایک عرضی پر سپریم کورٹ نے جمعرات کو سماعت کی۔ ایک عرضی پر سپریم کورٹ (Supreme Court)  نے جمعے کو سماعت کی۔ عدالت نے دونوں عرضیوں کی سنوائی کی اور دونوں پر ایک لاکھ روپئے کا جرمانہ بھی لگادیا۔ عدالت نے دونوں عرضیاں خارج کرتے ہوئے کہا کہ یہ سب ہبلسٹی کیلئے کیا جارہا ہے۔

بتادیں کہ لاک ڈاؤن  3.0 کے دوران  4 سے وزارت داخلہ نے شراب کی دکانیں کھولنے کی اجازت دی۔ اس بابت وزارت داخلہ نے کہا تھا کہ کنٹینمینٹ زون یعنی وہ علاقے جہاں کوروناوائرس متاثر لوگوں کی تعداد زیادہ ہے وہاں شراب کی دکانیں نہیں کھلیں گی۔ اس کے علاوہ ریڈ زون، اورینج، اور گرین زون میں شراب کی دکانیں کھلیں گی۔

حالانکہ سوشل ڈسٹینسنگ کے قواعد کی پیروی کرناہوگا، جبکہ عوامی مقامات پر شراب پینے اور پان، گٹخہ، تمباکو وغیرہ کھانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

عوامی مقامات پر شراب پینے اور پان، گٹخہ، تمباکو وغیرہ کھانے کی اجازت نہیں ہوگی۔

ساتھ ہی شراب کے دکانداروں کو یہ یقینی کرانا ہوگا کہ کسٹمرس کے درمیان کم سے کم چھ فٹ یعنی دو گز کی دوری ہو۔ دکان میں ایک وقت میں پانچ سے زیادہ لوگ نہ ہوں۔

کہا گیا تھا کہ لاک داؤن کے دوران عوامی مقامات پر شراب پینے، گٹکھا، تمباکو وغیرہ کی اجازت نہیں ہوگی۔ حالانکہ کم سے کم چھ فٹ کی دوری کسٹمرس کے درمیان یقینی کرنے کے بعد شراب ، پان، تمباکو کی بکری کرنے کی اجازت ہوگی اور دکان پر ایک وقت میں پانچ سے زیادہ لوگ نہیں ہوں گے۔
First published: May 15, 2020 04:39 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading