ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

یوپی پنچایت انتخابات کیلئے ووٹوں کی گنتی کو سپریم کی ہری جھنڈی، کہا۔Counting centers کے باہر ہو سخت کرفیو

یوپی پنچایت انتخابات (UP Panchayat Election) کی گنتی (Counting) اتوار کو وہگی۔ سپریم کورٹ نے کچھ شرائط کے ساتھ ووٹوں کی گنتی کرانے کا حکم دیا ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ ریاستی الیشن کمیشن کی طرف سے بنائے گئے کووڈ پروٹوکول کی پوری طرح پیروی کرنی ہوگی۔

  • Share this:

یوپی پنچایت انتخابات (UP Panchayat Election) کی گنتی (Counting) اتوار کو وہگی۔ سپریم کورٹ Supreme Court نے کچھ شرائط کے ساتھ ووٹوں کی گنتی کرانے کا حکم دیا ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ ریاستی الیشن کمیشن کی طرف سے بنائے گئے کووڈ پروٹوکول کی پوری طرح پیروی کرنی ہوگی۔ ساتھ ہی سپریم کورٹ نے کہا کہ گنتی پوری ہونے تک علاقے میں کرفیو (Curfew) رہے گا۔ عام لوگوں کو جمع نہ ہونے دیا جاےے۔ ساتھ ہی امیدواروں کا کووڈ ٹیسٹ ہو۔ ساتھ ہی جواب دہ افسران کے نام بھی سر فہرست کئے جائیں۔


وہیں یوپی حکومت نے کہا کہ ریپڈ اینڈیز ٹیسٹنگ سینٹر کاؤنٹر پر دستیاب ہوگا۔ گنتی سینٹر میں 150 سے زیادہ افسران نہیں ہوں گے اور 15-20 سے زیادہ امیدوار نہیں ہوں گے۔ ہم اپنی ذمہ داریوں کو سمجھ رہے ہیں۔ اس سے بھاگ نہیں رہے ہیں۔ کاؤنٹنگ سینٹر پر ہر ایک کو دستانے ، ماسک اور سوشل ڈسٹینسنگ کی پیروی کرائی جائے گی۔ اترپردیش حکومت کے وکیل نے بتایا کہ ہر ضلع میں سینئر افسران کی تقرری کی گئی ہے۔ وہ کوڈ پروٹوکول پر عمل پیرا ہونے کی نگرانی کریں گے اور پرنسپل سکریٹری کی سطح کے آئی اے ایس آفیسر ہوں گے۔


آسمان نہیں ٹوٹ پڑے گا

اسی دوران کچھ دیر پہلے یہ خبر بھی سامنے آئی تھی کہ اترپردیش میں کورونا انفیکشن کی وجہ سے خراب ہونے والی صورتحال کے سبب اتوار کو اترپردیش میں ہونے والے پنچایت انتخابات اور اس کی گنتی کے بارے میں سپریم کورٹ بہت سنجیدہ ہے۔ عدالت نے آج اس معاملے پر سماعت کے دوران سخت سوالات اٹھائے۔ عدالت نے ریاستی الیکشن کمیشن سے پوچھا کہ کیا ووٹوں کی گنتی کروانا ضروری ہے، کیا اسے ملتوی نہیں کیا جاسکتا ، اگر تین ہفتے کیلئے اس میں تاخیر ہوتی ہے تو آسمان نہیں ٹوٹ پڑے گا۔

حالات سب سے زیادہ بہتر کنٹرول میں ہوگی
کورونا پروٹوکول پر عمل کرنے کے لئے گنتی مراکز پر ریاستی الیکشن کمیشن کے اعتماد پر عدالت نے سخت تبصرہ کیا۔ اتر پردیش حکومت نے سپریم کورٹ کو بتایا کہ گنتی 8 گھنٹے کی شفٹ میں چلے گی اور ہر شفٹ میں افسران کو تبدیل کیا جائے گا۔ ہر شفٹ ختم ہونے کے بعد کاؤنٹنگ سینٹر کو صاف صفائی سینیٹائزیشن کرنے کا کام شروع کردیا جائے گا۔ 75 سے زیادہ شفٹوں ہوسکتی ہیں۔ اس پر سپریم کورٹ نے یوپی حکومت سے پوچھا کہ یوپی میں پنچایت انتخابات کی گنتی کو 2 ہفتوں کے لئے ملتوی کر دیا جائے تب تک ہمارے طبی انفراسٹرکچر میں بھی بہتری آئے گی۔ یہ توقع کی جاسکتی ہے کہ تبھی صورتحال قابو میں ہوگی۔
Published by: Sana Naeem
First published: May 01, 2021 01:42 PM IST