ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

گارگی کالج دست درازی کا معاملہ: سپریم کورٹ نے ہائی کورٹ سے رجوع کرنے کو کہا

دہلی کے گارگی کالج کی طالبات نے الزام عائد کیا ہے کہ گزشتہ چھ فروری کو شراب پی کر کچھ باہری لوگ کالج کیمپس میں گھس گئے ۔ انہوں نے لڑکیوں کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی اور بدتمیزی کی ۔

  • UNI
  • Last Updated: Feb 13, 2020 03:41 PM IST
  • Share this:
گارگی کالج دست درازی کا معاملہ: سپریم کورٹ نے ہائی کورٹ سے رجوع کرنے کو کہا
دہلی: گارگی کالج میں چھیڑخانی کی مخالفت میں طالبات کا دھرنا: فائل فوٹو

نئی دہلی۔ سپریم کورٹ نے دہلی یونیورسٹی کے گارگی کالج میں طالبات سے دست درازی کے معاملے کے تعلق سے جمعرات کے روز آئے عرضی گزار کو دہلی ہائی کورٹ جانے کا مشورہ دیا ۔ عرضی گزار  کے وکیل منوہر لال شرما نے چیف جسٹس شرد اروند بوبڈے، جسٹس بی آر گوائی اور جسٹس سوریہ كانت کی بینچ کے سامنے معاملے کا خصوصی ذکر کیا اور فوری طور پر سماعت کی درخواست کی۔


سپریم کورٹ


جسٹس بوبڈے نے شرما کو کہا کہ وہ اپنی عرضی لے کر دہلی ہائی کورٹ جائیں ۔ شرما نے سپریم کورٹ میں ایک عرضی دائر کر کے معاملے کی مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) سے جانچ کرانے کی ہدایت دینے کے لئے عدالت سے درخواست کی تھی۔ عرضی میں کہا گیا تھا کہ کالج میں سالانہ تقریب کے دوران ادھیڑ عمر کے لوگوں نے گھس کر کئی گھنٹوں تک طالبات سے مبینہ طور پر چھیڑ چھاڑ کی، جبکہ نہ تو کالج انتظامیہ نہ ہی وہاں تعینات پولیس افسران نے ان شرپسندوں کے خلاف کوئی کارروائی کی۔ درخواست گزار نے اس معاملے کی سی بی آئی جانچ کرائے جانے، تمام ویڈیو فوٹیج اور کالج اور باہر نصب سی سی ٹی وی کیمروں کی فوٹیج ضبط کرنے کی ہدایت دینے کی مانگ کی تھی۔


واضح ر ہے کہ دہلی کے گارگی کالج کی طالبات نے الزام عائد کیا ہے کہ گزشتہ چھ فروری کو شراب پی کر کچھ باہری لوگ کالج کیمپس میں گھس گئے ۔ انہوں نے لڑکیوں کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی اور بدتمیزی کی ۔ طالبات کا کہنا ہے کہ تین روزہ سالانہ تقریب کے آخری دن یہ واقعہ پیش آیا۔
First published: Feb 13, 2020 03:41 PM IST