ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کاویری آبی تنازع : سپریم کورٹ کی کرناٹک اور تمل ناڈو حکومت کو ہدایت ، تشدد اور املاک کا نقصان نہ ہو

سپریم کورٹ نے کرناٹک اور تمل ناڈو کو یہ یقینی بنانے کی آج ہدایت دی کہ کاویری پانی کا اشتراک کرنے سے متعلق اس کے حکم کے بعد دونوں ریاستوں میں کوئی تشدد اور املاک کا نقصان نہ ہو۔

  • UNI
  • Last Updated: Sep 15, 2016 07:29 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
کاویری آبی تنازع : سپریم کورٹ کی کرناٹک اور تمل ناڈو حکومت کو ہدایت ، تشدد اور املاک کا نقصان نہ ہو
سپریم کورٹ نے کرناٹک اور تمل ناڈو کو یہ یقینی بنانے کی آج ہدایت دی کہ کاویری پانی کا اشتراک کرنے سے متعلق اس کے حکم کے بعد دونوں ریاستوں میں کوئی تشدد اور املاک کا نقصان نہ ہو۔

نئی دہلی : سپریم کورٹ نے کرناٹک اور تمل ناڈو کو یہ یقینی بنانے کی آج ہدایت دی کہ کاویری پانی کا اشتراک کرنے سے متعلق اس کے حکم کے بعد دونوں ریاستوں میں کوئی تشدد اور املاک کا نقصان نہ ہو۔ چیف جسٹس ٹي ایس ٹھاكر اور جسٹس اےایم كھانولكر کی بنچ نے کہا کہ عدالت کے حکم کے بارے میں کوئی تشدد نہیں ہونا چاہئے، غیر مطمئن گروپ کے لئے قانون کا راستہ کھلا ہوا ہے۔ عدالت عظمی نے کہا کہ جب عدالت کا حکم ہے ، تو اس پر عمل کیا جانا چاہئے، لوگ قانون اپنے ہاتھ میں نہیں لے سکتے ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ عدالت نے گزشتہ پانچ ستمبر کو اپنے حکم میں کرناٹک حکومت کو حکم دیا تھا کہ وہ 10 دن تک تمل ناڈو کو روزانہ 15 ہزار کیوسک پانی فراہم کرائے لیکن اسے لے کر کرناٹک میں بھاری تشدد اور احتجاج ہونے لگے تھے۔ بعد میں کرناٹک حکومت نے عدالت سے اپنے پانچ ستمبر کے حکم میں ترمیم کرنے کی اپیل کی تھی جسے مانتے ہوئے عدالت عظمی نے 20 ستمبر تک روزانہ 15 ہزار کیوسک کی بجائے 12 ہزار کیوسک پانی دینے کا کرناٹک حکومت کو حکم دیا اور کیس کی سماعت کے لئے 20 ستمبر کی تاریخ مقرر کی تھی، لیکن سماجی کارکن پی شیو کمار نے کل ایک مفاد عامہ کی عرضی دائر کرکے فوری سماعت کی اپیل کی تھی۔ عدالت نے سماعت کے لئے آج کی تاریخ مقرر کر دی تھی۔

مسٹر شیو کمار نے سینئر ایڈووکیٹ آدش اگروال کے ذریعے مفاد عامہ عرضی دائر کرکے کاویری ندی پانی کے تنازعات کے معاملے میں قانون کا نظام برقرار رکھنے کا مرکز کو حکم دینے کی اپیل کی ہے۔

First published: Sep 15, 2016 07:28 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading