ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

سپریم کورٹ نے مسترد کی عرضی، کہا۔ کسی کاغذ پر لکھ دینے سے غیر ملکی نہیں ہو جاتے راہل گاندھی

عدالت نے واضح طور پر کہا کہ کسی ایک کاغذ پر لکھا ہونے سے راہل گاندھی کو غیر ملکی نہیں مانا جا سکتا

  • Share this:
سپریم کورٹ نے مسترد کی عرضی، کہا۔ کسی کاغذ پر لکھ دینے سے غیر ملکی نہیں ہو جاتے راہل گاندھی
کانگریس صدر راہل گاندھی: فائل فوٹو

سپریم کورٹ سے کانگریس صدر راہل گاندھی کو بڑی راحت ملی ہے۔ سپریم کورٹ نے راہل گاندھی کی شہریت کے معاملہ میں دائر عرضی کو مسترد کر دیا ہے ۔ عدالت نے واضح طور پر کہا کہ کسی ایک کاغذ پر لکھا ہونے سے راہل گاندھی کو غیر ملکی نہیں مانا جا سکتا۔ بتا دیں کہ وزارت داخلہ نے بھی راہل سے ان کی شہریت کے سوال پر نوٹس دے کر وضاحت طلب کی ہے۔


سپریم کورٹ نے کہا کہ عرضی گزار کو راہل گاندھی کی شہریت کے بارے میں پتہ کپ چلا۔ ساتھ ہی عدالت نے یہ بھی کہا کہ صرف اس لئے کہ کوئی شخص ایک کاغذ برٹش کی شکل میں اپنی شہریت نوٹ کرتا ہے۔ اس کا مطلب یہ نہیں کہ وہ برطانوی شہری بن جاتا ہے۔


عرضی گزار نے کہا کہ راہل گاندھی ملک کا وزیر اعظم بننا چاہتے ہیں۔ اس پر سپریم کورٹ نے کہا کہ کون ملک کا وزیر اعظم بننا نہیں چاہتا ہے۔ ملک کے 130 کروڑ لوگوں میں ہر کوئی وزیر اعظم بننا چاہتا ہے۔

First published: May 09, 2019 12:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading