ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بابری مسجد انہدام کیس کی سماعت سپریم کورٹ میں چار ہفتوں کیلئے ملتوی

نئی دہلی : بابری مسجد انہدام کیس کی سپریم کورٹ میں سماعت آج ہوگی۔ عدالت عظمی سی بی آئی اور حاجی محبوب احمد کی درخواست پر سماعت کرے گی۔

  • ETV
  • Last Updated: Jan 18, 2016 02:21 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بابری مسجد انہدام کیس کی سماعت سپریم کورٹ میں چار ہفتوں کیلئے ملتوی
فائل فوٹو

نئی دہلی : بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے سینئر لیڈر لال کرشن اڈوانی سمیت 21 ملزمان کو اجودھیا میں متنازعہ بابری مسجد منہدم کرنے کی مجرمانہ سازش رچنے کے الزامات سےبری کئے جانے کے خلاف دائر عرضی کی سماعت سپریم کورٹ میں چار ہفتوں کے ملتوی کردی گئی ہے۔


سپریم کورٹ نے مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کی اپیل کی سماعت چار ہفتوں کیلئے ملتوی کردی۔ عدالت کا یہ حکم اس وقت آیا جب فریقین نے ضروری دستاویز پیش کرنے کیلئے کچھ وقت طلب کیا۔ عدالت نے ان کےوکلاء کی دلائل کی سماعت کےبعد کارروائی ملتوی کی۔ سی بی آئی نے ان ملزمین کو مجرمانہ سازش رچنے کے مقدمہ سے بری کئے جانے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔


خیال رہے کہ مذکورہ معاملے کے سلسلے میں دو مقدمے درج ہیں۔ پہلا معاملہ مسٹر اڈوانی سمیت ان لیڈروں کے خلاف درج ہے جو چھ دسمبر 1992 کو مسجد منہدم کئے جانے کے دوران اسٹیج پر موجود تھے۔ جبکہ دوسرا معاملہ متنازعہ بابری مسجد کے ارد گرد جمع کارسیکوں کے خلاف ہے۔


تفتیشی ایجنسی نے مسٹر اڈوانی، مرلی منوہر جوشی، ونے کٹیار اور اشوک سنگھل سمیت 21 ملزمان کے خلاف تعزیرات ہند کی مختلف دفعات (153 اے، 153 بی اور 505) کے تحت فرد جرم داخل کی تھی۔ ذیلی عدالت نے ان تمام کو مجرمانہ سازش رچنے کے الزام سے بری کردیا تھا۔


عدالت عظمی میں سی بی آئی اور حاجی محبوب احمد کی درخواست پر سماعت کررہی ۔ جسٹس ایم وائی اقبال اور جسٹس ارون مشرا کی بینچ الہ آباد ہائی کورٹ کے اس فیصلے پر آخری سماعت کرے گی ، جس میں تمام ملزمان کو مجرمانہ سازش کے الزامات سے بری کر دیا گیا تھا۔


خیال رہے کہ گزشتہ سماعت میں سپریم کورٹ نے تمام ملزمان کو نوٹس جاری کر کے اس معاملے میں جواب داخل کرنے کو کہا تھا۔


ادھر بابری مسجد کیس میں فریق حاجی محبوب احمد نے اپنی عرضی میں کہا ہے کہ مرکز میں حکومت تبدیل ہونے ساتھ ہی جانچ ایجنسی نے ملزموں کے خلاف لگے الزامات کو کمزور کر دیا ہے۔

First published: Jan 18, 2016 10:26 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading