ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

شاہین باغ پر سپریم کورٹ کا فیصلہ، کہا۔ سڑک کو بند نہیں کیا جا سکتا

سپریم کورٹ نے شاہین باغ معاملے میں بدھ کو فیصلہ سنا دیا۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ کسی عوامی جگہ کو احتجاجی مظاہرہ کے لئے اس طرح سے استعمال نہیں کیا جا سکتا۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ سڑک کو غیر متعینہ مدت تک کے لئے بند نہیں کیا جا سکتا۔

  • Share this:
شاہین باغ پر سپریم کورٹ کا فیصلہ، کہا۔ سڑک کو بند نہیں کیا جا سکتا
شاہین باغ پر سپریم کورٹ کا فیصلہ، کہا۔ سڑک کو بند نہیں کیا جا سکتا

نئی دہلی۔ سپریم کورٹ (Supreme Court ) نے شاہین باغ ( Shaheen Bagh ) معاملے میں بدھ کو فیصلہ سنا دیا۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ کسی عوامی جگہ کو احتجاجی مظاہرہ کے لئے اس طرح سے استعمال نہیں کیا جا سکتا۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ سڑک کو غیر متعینہ مدت تک کے لئے بند نہیں کیا جا سکتا۔ اس طرح کے معاملے میں انتظامیہ کو کارروائی کرنی چاہئے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ مظاہرہ کا حق آئین میں ہے لیکن احتجاجی مظاہرہ کے لئے متعین جگہ ہونی چاہئے۔ عام لوگوں کو احتجاجی مظاہرہ سے دقت نہیں ہونی چاہئے۔ عدالت نے امید جتائی کہ مستقبل میں ایسی صورت حال نہیں ہو گی۔



سپریم کورٹ نے واضح کیا کہ ایسی صورت حال بننے پر انتظامیہ کو خود ہی کارروائی کرنی چاہئے۔ کسی عدالت کے حکم کا انتظار نہیں کرنا چاہئے۔ عدالت نے کہا کہ ایسی صورت حال میں سوشل میڈیا کے پروپیگنڈہ کے ذریعہ حالات خراب ہونے کا خطرہ بنا رہتا ہے۔

شاہین باغ احتجاج کے خلاف دائر کی گئی تھی عرضی

دراصل، دہلی کے شاہین باغ علاقے میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف ہوئے احتجاج کو لے کر اس بابت عرضی داخل کی گئی تھی۔ اس معاملہ میں عرضی گزار وکیل اور سماجی کارکن امت ساہنی نے عرضی داخل کی تھی۔ ساہنی نے عرضی میں کہا تھا کہ سڑکوں پر ایسا احتجاج جاری نہیں رہ سکتا۔ سڑکوں کو بلاک کرنے کے تئیں سپریم کورٹ کی ہدایات کے باوجود احتجاج 100 دنوں تک چلتا رہا اور سپریم کورٹ کو رہنما خطوط طئے کرنے چاہئیں۔


Published by: Nadeem Ahmad
First published: Oct 07, 2020 11:28 AM IST