ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

بڑھتے ریل حادثات: سریش پربھو نے کی استعفی کی پیشکش، وزیر اعظم نے کہا انتظار کریں

نئی دہلی۔ ریلوے کے وزیر سریش پربھو نے مسلسل دو ریل حادثوں کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے آج وزیر اعظم نریندر مودی سے مل کر استعفی کی پیشکش کی۔

  • UNI
  • Last Updated: Aug 23, 2017 04:32 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
بڑھتے ریل حادثات: سریش پربھو نے کی استعفی کی پیشکش، وزیر اعظم نے کہا انتظار کریں
وزیر موصوف کے استعفی کی پیشکش کا معاملہ گزشتہ چار دنوں کے اندر دو بڑے ریلوے حادثوں کے پس منظر میں سامنے آیا ہے۔

نئی دہلی۔  ریلوے کے  وزیر سریش پربھو نے مسلسل دو ریل حادثوں کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے آج وزیر اعظم نریندر مودی سے مل کر استعفی کی پیشکش کی۔ وزیر اعظم سے ملاقات کے بعد مسٹر پربھو نے اپنے ٹوئیٹر اکاؤنٹ پر سلسلہ وار ٹوئٹس میں ریل حادثے کو بدقسمتی قرار دیتے ہوئے لکھا کہ حادثے میں مسافروں کی موت اور زخمی ہونے سے وہ کافی رنجیدہ ہیں اور اس سے انہیں گہرا صدمہ پہنچا ہے۔ انہوں نے کہا کہ " میں نے وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کی اور حادثے کی پوری اخلاقی ذمہ داری قبول کی۔ وزیر اعظم نے مجھ سے کہا کہ انتظار کرو"۔


مسٹر سریش پربھو نے کہا کہ تین سال سے بھی کم عرصے میں ریلوے کے وزیر کے طور پر انہوں نے ریلوے کی بہتری کے لئے اپنا خون پسینہ بہایا۔ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں تمام شعبوں میں منظم اصلاحات کے ذریعے دہائیوں سے جاری ریلوے کی بری درگت کو ختم کرنے کی کوشش کی جس سے ریلوے میں بے مثال سرمایہ کاری ہوئي۔ مسٹر سریش پربھو نے کہا کہ ریلوے کو وزیر اعظم کے نئے ہندوستان کے تصور کے مطابق کارگر اور جدید ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ "میں یقین دلاتا ہوں کہ ریلوے اب اسی راہ پر گامزن ہے"۔


وزیر موصوف کے استعفی کی پیشکش کا معاملہ گزشتہ چار دنوں کے اندر دو بڑے ریلوے حادثوں کے پس منظر میں سامنے آیا ہے۔ گزشتہ ہفتہ کے روز ہونے والے پہلے حادثے میں اتر پردیش کے ضلع مظفرنگر میں ہری دوار کو جانے والی اتكل ایکسپریس کے پٹری سے اتر جانے کی وجہ سے 23 لوگوں کی موت ہو گئی تھی اور درجنوں لوگ زخمی ہو گئے تھے۔ دوسرے حادثے میں آج علی الصباح اترپردیش کے اور يا ضلع میں کیفیات ایکسپریس کے 10 ڈبے اور انجن پٹری سے اتر گئے، جس سے 78 مسافر زخمی ہو گئے۔

First published: Aug 23, 2017 04:31 PM IST