ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

پاک مقبوضہ کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ، اسامہ کو ویزا کیلئے سفارش کی ضرورت نہیں : سشما سوراج

نئی دہلی۔ حکومت ہند نے پاک مقبوضہ کشمیر کے باشندے اسامہ علی (24) کو ویزا دینے کا فیصلہ کیا ہے جو علاج کی غرض سے دہلی آنا چاہتا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jul 18, 2017 05:53 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
پاک مقبوضہ کشمیر ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ، اسامہ کو ویزا کیلئے سفارش کی ضرورت نہیں : سشما سوراج
وزیر خارجہ سشما سوراج کی فائل فوٹو: پی ٹی آئی

نئی دہلی: حکومت ہند نے پاک مقبوضہ کشمیر (پی او کے) کے لئے اپنی ویزا پالیسی میں تبدیلی کرتے ہوئے وہاں کے شہریوں کو علاج کے لیے حکومت پاکستان کی سفارش کے بغیر ہی ویزا دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے پاک مقبوضہ کشمیر کے ایک 24 سالہ اسامہ علی کو دہلی میں علاج کے لیے ویزا جاری کئے جانے کے فیصلے کی اطلاع دی۔ محترمہ سشما سوراج نے ٹوئیٹر پر کہا کہ پاکس مقبوضہ ا کشمیر ہندوستان کا 'اٹوٹ حصہ ہے اور اس لئے اسامہ علی کو پاکستان کے خارجہ امور کے مشیر سرتاج عزیز کےسفارش نامہ نہیں ملنے کے باوجود ویزا دیا جائے گا۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ "پی او کے ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے۔ پاکستان نے اس پر غیر قانونی قبضہ کر رکھا ہے۔ ہم ویزا دے رہے ہیں۔ کوئی سفارشی خط کی ضرورت نہیں ہے"۔

میڈیا رپورٹوں میں کہا گیا ہے کہ راولاكوٹ کے باشندے اسامہ علی کے جگرمیں ٹیومر ہے اور اسے دہلی کے ساکیت میں ایک پرائیویٹ اسپتال میں علاج کرانے کی صلاح دی گئی ہے۔ اسامہ علی کو ہندوستان آنے میں یہ مشکل پیش آ رہی تھی کہ اسے دیگر پاکستانی شہریوں کی طرح مسٹر سرتاج عزیز کا سفارش نامہ نہیں مل پا رہا تھا۔ عام طور پر حکومت ہند بیمار پاکستانی شہریوں کو علاج کرانے کے لیے ویزا دینے میں سخاوت قلبی کا مظاہرہ کرتی ہے۔

First published: Jul 18, 2017 02:55 PM IST