உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ڈھاکہ میں ہوئے دہشت گردانہ حملے میں ہندوستانی لڑکی تاروشی جین کی موت

    نئی دہلی۔  بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاكہ میں گزشتہ شب ہونے والے دہشت گردانہ حملے میں ایک ہندوستانی لڑکی تاروشی جین کی موت ہوگئی۔

    نئی دہلی۔ بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاكہ میں گزشتہ شب ہونے والے دہشت گردانہ حملے میں ایک ہندوستانی لڑکی تاروشی جین کی موت ہوگئی۔

    نئی دہلی۔ بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاكہ میں گزشتہ شب ہونے والے دہشت گردانہ حملے میں ایک ہندوستانی لڑکی تاروشی جین کی موت ہوگئی۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:

      نئی دہلی۔  بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاكہ میں گزشتہ شب ہونے والے دہشت گردانہ حملے میں ایک ہندوستانی لڑکی تاروشی جین کی موت ہوگئی۔ وزیر خارجہ سشما سوراج نے اس خبر کی تصدیق کرتے ہوئے تاروشی کی موت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ۔ محترمہ سشما سوراج نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ یہ ایک انتہائی المناک واقعہ ہے۔ وہ تاروشی کے اہل خانہ کے تئیں گہری تعزیت کا اظہار کرتی ہیں۔


      وزیر خارجہ کے مطابق دہشت گرد انہ حملے کے دوران تاروشی کو چند دیگر لوگوں کے ساتھ یرغمال بنا لیا گیا تھا اور بعد میں اس کوقتل کر دیا گيا۔ وزیر خارجہ نے کہا کہ انهوں نے تاروشی کے والد مسٹر سنجیو جین سے بات کی ہے۔ ڈھاکہ میں اس کے خاندان کے لئے وزارت خارجہ ویزا کا انتظام کر رہی ہے۔


      ذرائع کے مطابق 18 سالہ تاروشی جین نے حال ہی میں امریکی اسکول سے اپنی تعلیم مکمل کی تھی اور برکلے کالج میں داخلہ لیا تھا۔ وہ چھٹیاں گزارنے کے لئے ڈھاکہ گئی تھی۔ اس کا خاندان گزشتہ 15-20 برسوں سے ڈھاکہ میں ہے اور کپڑوں کا کاروبار کرتا ہے۔ ڈھاکہ کے ہولی ارٹسن ریستوران میں جمعہ کی رات ہونے والے دہشت گردانہ حملے میں 20 غیر ملکی شہری مارے گئے ہیں۔دہشت گردوں نے کئی لوگوں کو یرغمال بنا لیا تھا۔ یرغمالیوں کو چھڑانے کے لئے سلامتی دستہ کی جانب سے 13 گھنٹے تک جاری رہی کارروائی کے بعد چھ دہشت گرد مارے گئے اور 13 یرغمالیوں کو آزاد کرایا گیا۔ اس کارروائی میں دو پولس افسران کی بھی موت ہوئی ہے۔ دہشت گرد تنظیم اسلامک اسٹیٹ نے اس حملے کی ذمہ داری لی ہے۔




      First published: