ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

متنازع بنگلہ دیشی مصنفہ تسلیمہ نسرین کا اعلان ، خاموش نہیں رہوں گی، مرتے دم تک شدت پسندوں سے لڑوں گی

نئی دہلی : ہندوستان میں جلاوطنی کی زندگی گزار رہی متنازع بنگلہ دیشی مصنفہ تسلیمہ نسرین نے آج کہا کہ شدت پسندوں کے دباؤ میں وہ خاموش نہیں رہیں گی اور آخری سانس تک ان سے لڑتی رہیں گی۔

  • Agencies
  • Last Updated: Nov 29, 2015 12:31 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
متنازع بنگلہ دیشی مصنفہ تسلیمہ نسرین کا اعلان ، خاموش نہیں رہوں گی، مرتے دم تک شدت پسندوں سے لڑوں گی
نئی دہلی : ہندوستان میں جلاوطنی کی زندگی گزار رہی متنازع بنگلہ دیشی مصنفہ تسلیمہ نسرین نے آج کہا کہ شدت پسندوں کے دباؤ میں وہ خاموش نہیں رہیں گی اور آخری سانس تک ان سے لڑتی رہیں گی۔

نئی دہلی : ہندوستان میں جلاوطنی کی زندگی گزار رہی متنازع بنگلہ دیشی مصنفہ تسلیمہ نسرین نے آج کہا کہ شدت پسندوں کے دباؤ میں وہ خاموش نہیں رہیں گی اور آخری سانس تک ان سے لڑتی رہیں گی۔


تسلیمہ نے کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ بنیاد پرست مجھے مارنا چاہتے ہیں ، لیکن میں ان کے خلاف احتجاج کرنا چاہتی ہوں۔ اگر میں لکھنا بند کر دوں گی ، تو اس کا مطلب ہو گا کہ وہ جیت جائیں گے اور میں ہار جاؤں گی اور میں ایسا نہیں چاہتی۔ میں چپ نہیں رہوں گی۔ میں اپنی موت تک لڑتی رہوں گی۔


اپنی متنازع تصانیف کیلئے سرخیوں میں رہنے ولی 52 سالہ تسلیمہ ٹائمز لٹ فیسٹ میں بول رہی تھی۔ وہ بنگلہ دیش میں جان سے مارنے کی دھمکیوں کے پیش نظر 1994 سے جلا وطنی کی زندگی گزار رہی ہے ۔


تسلیمہ نے کہا کہ فسادات کے لئے مصنفین کو ذمہ دار نہیں ٹھہرایا جانا چاہئے۔ فسادی کتابیں نہیں پڑھتے ہیں۔ فسادی سیاسی مقصد سے فسادات کرتے ہیں اور کرناٹک میں فسادات اس لئے ہوئے کیونکہ کچھ لوگوں نے برقع پر میرے مضمون کو پسند نہیں کیا۔ یہ ان کا مسئلہ تھا، میرا نہیں۔


اظہار رائے کی آزادی کے حق کی حمایت کرتے ہوئے تسلیمہ نے کہا کہ اس کے بغیر جمہوریت بیکار ہے۔ تسلیمہ نے اپنا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ کچھ لوگوں نے مجھ پر متنازعہ موضوعات پر لکھنے کا الزام لگایا، لیکن یہ متنازعہ موضوع نہیں ہے۔ میرا خیال ہے کہ برقع دمن کی علامت ہے، تو میں برقع کے خلاف لکھتی ہوں۔

First published: Nov 29, 2015 12:30 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading